امریکہ نے لشکر طیبہ ،جھنگوی سمیت 20دہشتگرد تنظیموں کی فہرست پاکستان کے حوالے کر دی

امریکہ نے لشکر طیبہ ،جھنگوی سمیت 20دہشتگرد تنظیموں کی فہرست پاکستان کے حوالے ...

واشنگٹن (آن لائن) وائٹ ہاس نے 20 دہشت گرد تنظیموں کی فہرست مرتب کرکے پاکستان کے حوالے کردی ہے جن کے بارے میں ٹرمپ انتظامیہ کا دعوی ہے کہ یہ تنظیمیں پاکستان اور افغانستان سے دہشت گرد ی کی کارروائیاں کرتی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سفارتی ذرائع نے اس بات کی تردید کی کہ امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن نے دورہ اسلام آباد کے دوران پاکستانی قیادت کو 75 دہشت گردوں کی کوئی فہرست نہیں دی۔امریکی وزیر خارجہ نے سینیٹ کی خارجہ امورکمیٹی کی سماعت کے دوران کہا تھا کہ پاکستانیوں نے اشارہ دیا ہے کہ اگر ہم انہیں دہشت گردوں کی معلومات فراہم کریں تو وہ ان کے خلاف کارروائی کے لیے تیار ہیں، لہذا ہم تجربہ کے طور پر مخصوص خفیہ معلومات فراہم کرکے انہیں ایک اور موقع دینا چاہتے ہیں۔ایک علیحدہ بریفنگ کے دوران ٹلرسن کا کہنا تھا کہ امریکہ اور پاکستان دہشت گردوں کی معلومات کے تبادلے کے حوالے سے رابطے میں ہیں جس کا مقصد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پیغام کو واضح کرنا ہے کہ پاکستان کو حقانی نیٹ ورک اور طالبان کے خلاف کارروائی کرناہوگی۔انہوں نے کہا کہ جو معلومات امریکہ نے پاکستان کو فراہم کی ہیں وہ انفرادی ناموں سے آگے ہیں، مریکہ بھی پاکستان سے اسی طرح کی معلومات چاہتا ہے جو دہشت گردوں کو نشانہ بنانے کے لیے فائدہ مند ہوں گی۔ مستقبل میں دہشت گردوں کے بارے میں معلومات کی فراہمی ان کی موجودگی سے بھی زیادہ آگے کی ہوں گی۔وائٹ ہا ؤس کی جاری کردہ فہرست کے مطابق ان تنظیموں کو تین حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں سے ایک افغانستان میں دہشت گردی کے حملوں میں ملوث، دوسرے پاکستان میں دہشت گردی کے حملوں میں ملوث اور تیسرے وہ ہیں جن کی توجہ کشمیر پر مرکوز ہے۔واشنگٹن کی فہرست میں صف اول حقانی نیٹ ورک ہے، پاکستان نے متعدد مرتبہ امریکہ کے ان الزامات کی تردید کی ہے اور واضح کیا ہے کہ حقانی نیٹ ورک کے ان کی سرزمین پر کوئی ٹھکانے موجود نہیں ۔امریکی فہرست میں جن تنظیموں کا ذکر کیا گیا ہے ان میں حقانی نیٹ ورک، حرکت المجاہدین، جیشِ محمد، تحریک طالبان پاکستان، جند اللہ، لشکرِ طیبہ، لشکرِ جھنگوی، حرکت الجہادِ اسلامی، جماعت الاحرار، جماعت الدعو ۃالقرآن، طارق گدر گروپ، اسلامی انقلابی گارڈ گروپ، کمانڈر نظیر گروپ، بھارتی مجاہدین، اسلامی جہاد یونین، اسلامی موومنٹ ازبکستان، داعش خراساں گروپ، القاعدہ برِصغیر اور ترکستان اسلامک پارٹی موومنٹ شامل ہیں حرکت الجماہدین کے حوالے سے امریکہ کہتا تھا کہ اس گروپ کاالقاعدہ سے رابطہ تھا جو بقول انکے کشمیر میں کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔امریکہ کے مطابق حافظ سعید کی جماعت لشکرِ طیبہ اس وقت برِ صغیر کی سب سے بڑی، فعال اور منظم جماعت ہے ۔لشکرِ جھنگوی کے بارے میں امریکہ کا دعوی ہے کہ یہ دہشت گرد گروپ پاکستان میں فرقہ ورانہ کارروائیوں میں ملوث ہے جس میں زیادہ تر شیعہ برادری کے افراد مارے گئے۔تحریک طالبان پاکستان کے بارے میں امریکہ کا کہنا تھا کہ یہ گروپ اپنے سائے تلے خطے میں موجود دیگر دہشت گرد گروپوں کو تحفظ فراہم کرتا ہے جو پہلے پاکستان میں موجود تھا تاہم اب یہ افغانستان منتقل ہوگیا ہے، ٹی ٹی پی اپنی مرضی سے اس خطے میں جبرا شریعت نافذ کرنا چاہتی ہے اور امریکہ اور اتحادی افواج کے خلاف لڑنے کے لیے دیگر دہشت گرد گروپوں کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کر رہی ہے۔

امریکہ فرہرست

مزید : علاقائی