چین کی مولانا مسعود اظہر بارے پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، بھارت

چین کی مولانا مسعود اظہر بارے پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، بھارت

نئی دہلی(آئی این پی)چین کی مولانا مسعود اظہر کو بین الاقوامی دہشت گرد قرار دینے بارے پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے، اس معاملے پر ابھی اتفاق نہیں پایا جاتا، چین اس درخواست کو تکنیکی بنیادوں پر ویٹو کرے گا، چین اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی 1267 کمیٹی کے اختیار اور مؤثریت کو یقینی بنائے گا۔ بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق چین کی وزارعت خارجہ کی ترجمان ہوا چھن یینگ نے میڈہا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ایم ایم کے سربراہ مسعود اظہر کو اقوام متحدہ کی طرف سے عالمی دہشت گردی کے طور پر فہرست دینے کے لئے بھارت کی کوششوں کو روکنے کے لئے اس کی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے، اس معاملے پر ابھی بھی کوئی اتفاق نہیں پایا جاتا۔انہوں نے کہا کہ ہم کمیٹی سے اس معاملہ کو سمجھنے اور نتیجہ پر پہنچنے کے لئے تکنیکی بنایدوں پر مزید وقت طلب کریں گے۔چین کیوں کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا مستقل نمائندہ ہے اس لئے چین اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی 1267 کمیٹی کے اختیار اور مؤثریت پر کوئی قدغن نہیں لگائے گا۔ معاملات کی گہرائی تک پہنچنا چین کا اصولی حق ہے جسے استعمال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم کمیٹی کے مینڈیٹ اور طریقہ کار کے قوانین پر عمل کریں گے اور کمیٹی کے ارکان کے ساتھ مسلسل رابطے اور تعاون میں رہیں گے۔ انہوں نے مسعود اظہر بارے چینی مؤقف کی وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ کمیٹی ابھی تک کسی نتیجہ پر نہیں پہنچ سکی ہے یہ ایک حقیقت ہے.۔

مولانا مسعود اظہر

مزید : علاقائی