نواز شریف کی گرفتاری کا مطالبہ غیر آئینی نہیں،سردار لطیف کھوسہ

نواز شریف کی گرفتاری کا مطالبہ غیر آئینی نہیں،سردار لطیف کھوسہ

کراچی (این این آئی) پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما سردار عبدالطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ نواز شریف کی گرفتاری کا مطالبہ غیر آئینی نہیں ہے ۔سندھ میں گرفتاریاں ہورہی ہیں تو پنجاب میں بھی ہونی چاہئیں ۔نواز شریف کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے ملک اور اداروں کا نقصان ہورہا ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو سندھ ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ مفاہمت کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ایک چور ،ڈاکو اور لٹیرے کو سیاسی جماعت کا صدر بنادیا جائے ۔حکومت سیاسی جماعتیں چلاتی ہیں ۔ایک نااہل شخص پارٹی کا صدر بن کر حکومت کو کنٹرول کرے ہم ایسا نہیں ہونے دیں گے ۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی جانب سے شریف فیملی کی گرفتاری کے مطالبے کو کسی غیرآئینی اقدام سے تشبیہ دینا غلط ہے ۔ہم کسی بھی غیر آئینی اقدام کی حمایت نہیں کریں گے ۔سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ سندھ میں گرفتاریاں ہورہی ہیں تو پنجاب میں بھی ہونی چاہئیں ۔نیب سب کو گرفتار کرے یا مان لے کہ ڈاکٹرعاصم حسین ،شرجیل میمن اور دیگر کی گرفتاریاں غلط ہیں ۔نواز شریف کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے ملک اور اداروں کا نقصان ہو رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی مسلح افواج کا شمار دنیا کی بہترین افواج میں ہوتا ہے ۔وہ ایک ادارہ ہے ۔جنرل کا کام حکمرانی نہیں ہے ۔آئین میں فوج کا کردار متعین کردیا گیا ہے ۔ایک سوال کے جواب میں سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ کسی بھی سیاسی جماعت کی مقبولیت کا پیمانہ ضمنی انتخابات نہیں ہیں ۔سیاسی جماعتوں کی مقبولیت کا اندازہ 2018کے انتخابات سے ہوگا ۔پیپلزپارٹی سندھ سمیت پورے ملک سے بھرپور کامیابی حاصل کرے گی ۔

سردار لطیف کھوسہ

مزید : علاقائی