پائیدار ترقی کا سیکرٹریٹ صرف پاکستان کی پارلیمنٹ میں قائم ہے: مریم اورنگزیب

پائیدار ترقی کا سیکرٹریٹ صرف پاکستان کی پارلیمنٹ میں قائم ہے: مریم اورنگزیب

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیر مملکت اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا ہے پاکستان کی واحد پارلیمان ہے جہا ں پائیدار ترقی کے اہداف کا سیکرٹریٹ قائم ہے، پائیدار ترقی کے اہداف کے حصول کیلئے صوبوں میں موثر رابطے،ٹیکنالوجی کا استعمال لازمی ہے، تعلیم اور صحت کیلئے بجٹ بڑھانے کے اقدامات کر رہے ہیں اور پائیدار ترقی کے ا ہداف کے حوالے سے رپورٹنگ کا عمل آسان بنا دیا گیا ہے، آبادی کے مسائل کے حوالے سے پارلیمنٹ جلد کانفرنس منعقد کریگی، ٹی وی، پارلیمنٹ کیلئے علیحدہ سے چینل کا آغاز کر رہا ہے جو صرف پارلیمانی امور اور سرگرمیوں کی کوریج کرے گا۔وہ جمعرات کو پائیدار ترقیاتی کے ا ہداف سے متعلق پارلیمنٹری ٹاسک فورس کے نالج شیئرنگ گول میز اجلاس سے خطاب کر رہی تھیں۔وزیر مملکت اطلاعات کی زیر صدارت ہونیوالے اجلاس میں پنجاب، خیبرپختونخوا ، بلو چستا ن سمیت گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے ارکان اسمبلی نے شرکت کی۔اس موقع پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر مملکت اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا1999 میں ایم ڈی جیز مقرر ہو رہے تھے تب ملک میں آمریت تھی، آئین معطل رہا،اس کے بعد اکتوبر 2005 میں زلزلہ آیا،جس وقت ایم ڈی جیز بن رہے تھے تب کچھ ممالک کی جانب سے ہداف مقرر نہیں کیے گئے تھے،2010 میں اٹھارویں ترمیم آگئی،جس کے بعد ایم ڈی جیز کے کئی مقاصد صوبوں کے پاس چلے گئے،ہم نے پاکستان میں تعلیم کو ہدف رکھ کر ترجیحا کام شروع کیا ،پا ر لیمنٹ نے سوچا پاکستان کو پارلیمنٹ ٹاسک فورس کی ضرورت ہے۔ پارلیمنٹری ٹاسک فورس کے آغاز میں صرف 12 لوگ شامل تھے، آج 45 لوگ پارلیمنٹری ٹاسک فورس کا حصہ ہیں۔ تعلیم و صحت کیلئے بجٹ بڑھانے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں،رپورٹنگ کا عمل آسان بنا دیا گیا ہے،ایم ڈی جیز کے ہداف پورے نہ ہونے کی وجہ پارلیمان سے عدم وابستگی تھی،پہلی بار پائیدار ترقی کے ہداف کیلئے سیکرٹریٹ قائم کیا گیا،پارلیمنٹری ٹاسک فورس نے متحرک طور پر کردار ادا کیا،پائیدار ترقی ہداف کے حصول کیلئے صوبوں میں موثر رابطے کیلئے ٹیکنالوجی کا استعما ل لازمی ہے۔ پی ٹی وی پارلیمنٹ کیلئے علیحدہ سے چینل کا آغاز کر رہا ہے،کو صرف پارلیمانی امور اور سرگرمیوں کی کوریج کرے گا،یہ چینل پارلیمانی امور سے متعلق مزید آگاہی پیدا کرنے میں موثر کردار ادا کرے گا۔

مزید : صفحہ آخر