سائنس و ٹیکنالوجی کے2.35 ارب روپے مالیت کے منصوبوں کی منظوری

سائنس و ٹیکنالوجی کے2.35 ارب روپے مالیت کے منصوبوں کی منظوری

اسلام آباد (این این آئی)سنٹرل ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی نے سائنس و ٹیکنالوجی کے2.35 ارب روپے مالیت کے منصوبوں کی منظوری دیدی ہے جبکہ ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ حکومت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی اور اعلیٰ تعلیم کے فروغ کیلئے عملی اقدامات کر رہی ہے ٗوژن 2025ء کے تحت پاکستان کے مختلف منصوبہ جات سمیت آزاد کشمیر ، گلگت بلتستان اور قبائلی علاقہ جات کیلئے ایک جامع منصوبہ تیار ہے جس پر تیزی سے کام جاری ہے۔ سنٹرل ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی نے سائنس و ٹیکنالوجی کے2.35 ارب روپے مالیت کے منصوبوں کی منظوری دی ۔ وہ اجلاس سے خطاب کررہے تھے جس میں ہائر ایجوکیشن کمیشن نے ملیر کراچی میں ایجوکیشن سٹی میں مدرستہ الاسلام کا نیا کیمپس بنانے کیلئے ایک ارب 63 کروڑ 76 لاکھ 52 ہزار روپے کی لاگت کا منصوبہ پیش کیا جسے اجلاس نے منظور کیا ۔ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کی جانب سے دو منصوبے 27 کروڑ 57 لاکھ 52 ہزار اور44 کروڑ 13لاکھ 80 ہزار روپے کی لاگت کے پیش کیے گئے جس میں سلکان سٹریپ ٹریکر اور ماون سسٹم کی اپ گریڈیشن اور دوسرا منصوبہ نیشنل سنٹر فار فزکس کی آر اینڈ ڈی لیبارٹری کی اپ گریڈیشن شامل ہے جسے اجلاس نے منظور کیا گیا۔

منصوبوں کی منظوری

مزید : علاقائی