پرائمری سکول پیر کالونی نمبر 2 میں بچوں پر تشدد معمول‘ والدین کا احتجاج


ملتان ( سٹاف رپورٹر )گورنمنٹ پرائمری سکول پیر کالونی نمبر 2میں بچوں پر تشدد معمول بن گیا۔ بتایا گیا ہے کہ چوتھی جماعت کی ٹیچر پروین اختر نے ایک سٹوڈنٹ عادل کو ڈنڈا پکڑا کر طلبہ کی نگرانی پر مامور کر دیا جس نے ایک بچی اقرا حمید کے(بقیہ نمبر17صفحہ12پر )

چہرے پر ڈنڈا مار کر اسے زخمی کر دیا جس کی آنکھ با ل بال بچ گئی ۔ اس کے علاوہ ایک ٹیچر بشریٰ نے پانچویں جماعت میں کسی بات پر ایک طالبہ لائبہ گلفام کو زور دار تھپڑمار دیا جس پر بچی شدت تکلیف سے رونے لگی ۔ اس صورتحال میں متاثرہ بچی لائبہ گلفام کی ماں شکایت لے کر سکول آئی تو ٹیچر بشریٰ نے اس کی بے عزتی کر دی اور اسے سکول سے نکل جانے کو کہا مگر وہ احتجاجاً سکول میں ہی بیٹھ گئی۔تعلیمی حلقوں نے تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اعلی ٰحکام صورتحال کا نوٹس لیں اور غیر ذمہ دار اور ظالم سٹاف کے خلاف کارروائی کریں ۔اس سلسلے میں اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر سے بھی باز پرس کریں جن کے بارے میں کہاجاتا ہے کہ وہ معلمات سے’’ خوش گپیوں‘‘ میں مصروف رہتے ہیں ۔شاید اسی وجہ سے بچوں پرتشددکے معاملات پر ان کی نظر نہیں ہے ۔ اس بارے میں موقف لینے کے لئے ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ایلمنٹری ( مردانہ)حافظ قاسم سے فون پر رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی مگر ان کا فون اٹینڈ ہی نہیں ہو سکا ۔
پرائمری سکول

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...