چارسدہ میں کھلی کچہری‘ ڈپٹی کمشنر کے سامنے مسائل کے انبار

چارسدہ میں کھلی کچہری‘ ڈپٹی کمشنر کے سامنے مسائل کے انبار

چارسدہ (بیورورپورٹ)منتخب بلدیاتی نمائندوں ،تاجر تنظیموں ، عمائدین علاقہ ، سماجی تنظیموں اور مختلف طبقہ فکر کے لوگوں نے ڈپٹی کمشنر کے سامنے کھلی کچہری میں مسائل کے انبار لگا دئیے ۔ محکمہ صحت، تعلیم، ایری گیشن، محکمہ ریونیو ، لوکل گورنمنٹ اور محکمہ پولیس کے خلاف شرکاء پھٹ پڑے ۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی حکومت اور چیف سیکرٹری کی ہدایت پر ڈپٹی کمشنر چارسدہ منتظر خان نے کھلی کچہری کا انعقاد کیا ۔ کھلی کچہری میں ایم پی اے فضل شکور خان ،تحصیل ناظم خلیل بشیر خان عمرزئی ، سرکاری محکموں کے آفسران ،منتخب بلدیاتی نمائندوں ،تاجر اور سماجی تنظیموں کے ساتھ ساتھ عمائدین علاقہ نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔ کھلی کچہری میں اظہار خیال کرتے ہوئے صمد باچا ،حلیم اللہ ،رحم بادشاہ ،اعظم باچااور دیگر نے کہا کہ چارسدہ میں اندھیر نگری چوپٹ راج چل رہا ہے ۔ عوام کے فلاح وبہبود کے محکمے عوام کو ریلیف دینے کی بجائے من مانیاں کررہی ہے ۔ محکمہ ریونیو ،محکمہ صحت ،تعلیم ، ایری گیشن ، لوکل گورنمنٹ اور محکمہ پولیس بے لگام گھوڑے بن چکے ہیں ۔ نکاسی آب کے ناقص انتظامات کی وجہ سے ہر طرف بد بو اور تعفن پھیلی ہوئی ہے جس سے موذی امراض پھیل رہے ہیں ۔ قبر ستان گندگی کے ڈھیر بن چکے ہیں ۔ شہر میں سٹریٹ لائٹ کا نام ونشان نہیں ہے ۔ زنگ آلود پائپوں میں عوام کو مضر صحت پانی فراہم کیا جا رہا ہے ۔ پٹواری سسٹم نے غریب عوام کا جینا محال کر رکھاہے۔ ڈی ایچ کیو ہسپتال چارسدہ سمیت ضلع بھر کے چھوٹے بڑے ہسپتالوں میں عوام کیلئے صحت کی کوئی سہولت موجود نہیں ۔ محکمہ پولیس اختیارات کا غلط استعمال کر رہی ہے مگر کوئی پوچھ گچھ نہیں ۔ ٹریفک کا نظام درہم برہم ہے مگر ٹریفک اہلکار لمبی تھان سو گئے ہیں ۔شہر بھر میں مضر صحت اشیاء کی خرید وفروخت دھڑلے سے جاری ہے ۔ چارسدہ کا مین چوک کھنڈر بن چکا ہے ۔ کھلی کچہری میں عوام نے بلدیاتی نظام پر بھی شدید تنقید کی ۔عوامی شکایات کے حوالے سے ڈپٹی کمشنر منتظر خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ ریاستی اداروں کے حوالے سے عوامی شکایات اور داد رسی کیلئے کمپلینٹ سل قائم کیا گیا ہے اور کسی بھی محکمہ کے حوالے سے شکایت کی صورت میں عوام براہ راست کمپلینٹ سل سے رابطہ کر سکتے ہیں جبکہ عوام براہ راست ان سے بھی رابطہ کر سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی واضح ہدایات کے مطابق تمام ریاستی اداروں کو عوام کاحقیقی خدمتگار بنایا جا ئیگاکیونکہ ریاستی ادارے عوام کے ٹیکسوں سے چلتے ہیں ۔ انہوں نے سرکاری محکموں کے آفسران پر واضح کیا کہ عوام کو شکایت کا موقع نہ دیں اور آج کا کام کل پر نہ چھوڑدیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر