سموگ نے گلے پکڑ لیے، ہسپتالوں میں رش، معمولات زندگی تباہ

سموگ نے گلے پکڑ لیے، ہسپتالوں میں رش، معمولات زندگی تباہ

ملتان، عبد الحکیم، نواں شہر، جودھ پور، وہاڑی، کرم پور، لُڈن، دھنوٹ، لیاقت پور، ڈیرہ غازیخان (سپیشل رپورٹر، وقائع نگار، نمائندگان) ملتان سے سپیشل رپورٹر، وقائع نگار کیمطابق ملتان (بقیہ نمبر42صفحہ7پر )

سمیت جنوبی پنجاب میں سموگ کے بادل چھائے رہنے کا سلسلہ جاری ہے جس کے باعث معمولات زندگی درہم برہم ہوکر رہ گئے ہیں اس ضمن میں ماہرین کے مطابق سموگ دھویں اور دھند کے مرکب کو کہا جاتا ہے اس دھویں میں کاربن مونوآکسائیڈ، نائٹروجن آکسائیڈ، میتھین اور کاربن ڈائی آکسائیڈ جیسے زہریلے مواد شامل ہوتے ہیں جب یہ تمام اجزاء باہم مل جاتے ہیں تو سموگ پیدا ہوتی ہے جو بارشیں نہ ہونے کی وجہ سے خطرناک صورت حال اختیار کرلیتی ہے۔ سموگ انسان کی صحت کو بہت سے نقصانات پہنچاتی ہے خاص طور پر ایسے لوگ جنہیں پہلے سے سینے، پھیپھڑے یا دل کی بیماری ہو ان کیلئے سموگ مزید بیماریوں کا پیش خیمہ ثابت ہوسکتی ہے۔ سب سے پہلے تو انسان کے گلے میں خراب پیدا ہوتی ہے۔ پھر ناک اور آنکھوں میں چبھن کا احساس ہوتا ہے اس کے بعد بھی احتیاط نہ کی جائے تو سانس لینے میں بھی مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ صنعتی آلودگی اور دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کی تعداد میں اضافہ کے علاوہ کھیتوں میں موجود فصلوں کی باقیات کو آگ لگانے کا عمل سموگ پیدا کرنے کا باعث بن رہا ہے۔ ملتان میں سموگ کے باعث ہسپتالوں میں مریضوں کے رش میں اضافہ ہو رہا ہے نشتر ہسپتال میں شہباز شریف ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ، سول ہسپتال ، چلڈرن کمپلیکس میں آنکھوں، سانس، جلد کے درجنوں مریض لائے جا رہے ہیں دریں اثناء سموگ کے حوالے سے سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کمپنی نے گز شتہ روز شہر کی سٹر کو ں اور مید انی علا قوں میں پا نی کا چھڑ کا ؤ کیا ۔سمو گ کے اثرا ت کم کر نے کیلئے ویسٹ مینجمنٹ کمپنی نے روزانہ کی بنیاد پر شہر بھر میں خصوصی چھڑ کا ؤ مہم چلا نے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ اس سلسلے میں مینجنگ ڈا ئر یکٹر ویسٹ مینجمنٹ کمپنی عمران نو ر نے کہا کہ شہر میں کو ڑا کر کٹ اور آ لائشیں جلا نے والوں کے خلاف بھی کریک ڈاؤ ن شر وع کر دیا گیا ہے ۔ عبدالحکیم سے نمائندہ پاکستان، سٹی رپورٹر کیمطابق فوگ و سموگ سے بچاؤ کے لئے لائٹس و ماسک کا استعمال کیاجائے ،حفاظتی اقدامات سے ہی متعدد بیماریوں سے بچنا ممکن ہے،ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ریسکیو1122ڈاکٹر اعجاز انجم کی زیر صدارت ماہانہ اجلاس منعقد ہوا ۔جس میں موسمی تغیرات کے حوالے سے حفاظتی اقدامات کرنے بارے ہدایات جاری کی گئیں۔ڈاکٹر اعجاز انجم نے بتایا کہ سردیوں کے آغاز میں ہی فوگ اور سموگ کا عمل شروع ہوچکا ہے روزانہ سفر کرنیوالے حضرات خصوصامسافر گاڑیوں پردھند کے دوران فوگ لائٹس کا استعمال یقینی بنایاجائے تاکہ حادثات سے محفوظ رہا جا سکے۔کھلی فضاء میں سفر کرنیوالے اور موٹر سائیکل یوزرزماسک کا استعمال ہرصورت یقینی بنائیں۔انہوں نے ریسکیواینڈ سیفٹی آفیسرکنور فہیم احمد کو ہدایات دیں کہ وہ سکولوں ،دفاتر اور معاشرے کے ان طبقات تک یہ پیغام پہنچائیں جن کے مذکورہ موسمی تغیرات سے متاثر ہونے کا خدشہ موجود ہے۔ انہوں فوگ اور سموگ سے بچاؤ کے متعلق آگاہی کے لئے مختلف مقامات پر سٹال لگانے کے احکامات جاری کئے۔ نواں شہر جودھ پور سے نمائندہ پاکستان کیمطابق یہاں بھی سموگ کے باعث نظام زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ،شہر ی آنکھوں اور سانس کی بیماریوں میں شکار ،ڈاکٹر ز حضرات کا شہریوں کو عینک اور ماسک پہننے کا مشورہ ہے وہاڑٰ سے بیورو رپورٹ اور نامہ نگار کیمطابق شہر اور گر دو نواح میں دوسرے روز بھی اسموک کا راج ، سڑکوں پر ٹریفک کی روانی متا ثر ، لو گو ں میں سانس ، گلے اور پھیپھڑوں کی بیماریاں پھیلنے کا اندیشہ لوگوں کو غیر ضروری سفر کرنے سے احتیاط کرنی چاہیے لڈن سے نامہ نگار کیمطابق لڈن اور اس کے گردونواح کے علاقوں کو سموگ نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے صبح کے وقت اس قدر زیادہ ہو جا تی ہے کہ حد نگاہ صفر کے قریب پہنچ جا تی ہے سمو گ وجہ سے سانس لینے میں دشواری ہو تی ہے اور آنکھوں میں چبھن اور درد محسوس ہو تا ہے جس کی وجہ سے طلبا و طالبات کو سکو لوں اور سر کا ری ملازمین کو دفتروں میں جا نے پر شدید دشواری کا سامنا کر نا پڑتا ہے کرم پور سے نامہ نگار کیمطابق کرم پور اور گرد نوح میں سموگ نے ڈیرے ڈال لئے حد نگاہ صفر ،سردی کی شدت میں اضافہ ہونے لگا ،درجنوں افراد بیمار پڑ گئے،ٹریفک کی روانی متاثر ،کاروبار بند ہو گئے،طلبہ اور ملازمین کو دفاتر اور سکول پہنچنے میں دقت پیش آرہی ہے،پچھلے تین دن سے دھوپ کا نام ونشان نہ ہے۔ دھنوٹ سے نمائندہ خصوصی کیمطابق دھنوٹ میں صبح کے وقت دھند یا سموگ کا راج ہوتا ہے جو دن چڑھے تک قائم رہتی ہے۔ شہری و ارد گرد کے لوگ سموگ کی وجہ سے پریشانی کا شکار ہیں۔ شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومتی اداروں کی طرف سے سموگ سے متعلق احتیاطی تدابیر بارے آگاہی مہم چلائی جائے تاکہ سموگ کے نقصانات سے شہری محفوظ رہ سکیں۔ لیاقت پور سے نامہ نگار کیمطابق سینے،پھپھڑے اور دل کے امراض میں مبتلا افراد کیلئے سموگ انتہائی خطرناک ہے۔دمہ کے مریضوں کی حالت اس موسم میں خطرناک حد تک بگڑ سکتی ہے ایسے مریض اپنے پاس ہمہ وقت انہیلر رکھیں ان خیالات کا اظہار تحصیل ہسپتال کے میڈیکل آفیسر اور ماہر امراض سینہ و دمہ ڈاکٹر کا شف حمید ملک نے پریس کلب لیاقت پورکے ارکان سے گفتگو کے دوران کہاٍ کہ امراض سینہ و دل میں مبتلا افراد بلاجواز گھروں سے نہ نکلیں کیونکہ ایسا کرنے سے نہ صر ف ان کی موجودہ بیماریاں بڑھ سکتی ہیں بلکہ مزید خطرناک امراض بھی لاحق ہو سکتی ہیں انہوں نے کہا کہ سموگ سے نزلہ ،زکام ،کھانسی ،گلے کی خراش اور بخار بھی ہو سکتا ہے انہوں نے کہا کہ سموگ سے بچاؤ کیلئے ماسک کا اور موٹر سائیکل پر سفر کرنے والے ھیلمٹ اور چشمے کا استعمال کریں گاڑیوں میں سفر کرنے والے اپنی گاڑیوں کے شیشے چڑھا کر رکھیں۔ گھروں میں جھاڑو کی بجائے گیلا کپڑا استعمال کریں کھڑکیاں اور دروازے بند رکھیں جبکہ گھروں سے باہر پانی کا چھڑکاؤ کریں ڈاکٹر کاشف حمید نے کہا کہ گھروں میں واپس آ کر ناک اور گلے کو پانی سے غرارہ کرائیں جبکہ زیادہ سے زیادہ پانی پئیں تو اس آفت سے محفوظ رہا جاسکتا ہے۔ ڈیرہ غازیخان سے سٹی رپورٹر کیمطابق حکومت پنجاب نے صوبہ بھر میں سموگ کی موجودہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے کوڑا کرکٹ ، فصلوں کی باقیات ، پلاسٹک ، چمڑے کے تھیلوں ، پولی تھین بیگز ، ربڑ اور سالڈ میونسپل ویسٹ کے جلانے پر پابندی عائد کرتے ہوئے دفعہ 144نافذ کر دی ہے جو 16دسمبر تک موثر رہے گی . صوبہ بھر کے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ اس سلسلے میں مانیٹرنگ ٹیمیں تشکیل دے کر خلاف ورزی کے مرتکب لوگوں کے خلاف مقدمات درج کر کے گرفتاریاں عمل میں لائیں او رروزانہ کی بنیاد پر رپورٹ پیش کی جائے. ۔

سموگ

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...