لاہور سے سموگ کا خاتمہ کیوں نہیں ہورہا ؟ ممکنہ وجہ سامنے آگئی، جان کر آپ کو بھی حکومت پر شدید غصہ آجائے گا

لاہور سے سموگ کا خاتمہ کیوں نہیں ہورہا ؟ ممکنہ وجہ سامنے آگئی، جان کر آپ کو ...
لاہور سے سموگ کا خاتمہ کیوں نہیں ہورہا ؟ ممکنہ وجہ سامنے آگئی، جان کر آپ کو بھی حکومت پر شدید غصہ آجائے گا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور سمیت پنجاب کے کئی شہروں میں دھویں اور آلودگی کی وجہ سے پیدا ہونے والی سموگ کے باعث عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، محکمہ ماحولیات پنجاب کی جانب سے سموگ کی شدت میں کمی کیلئے دھواں خارج کرنے والی گاڑیوں اور فیکٹریوں کے خلاف کریک ڈاﺅن شروع کردیا گیا ہے جبکہ کسانوں کو دھان کی پرالی جلانے سے بھی روک دیا گیا ہے تاکہ اس سے پیدا ہونے والا دھواں ماحول کی آلودگی میں اضافہ نہ کرسکے لیکن ایسے میں ایک نیا مسئلہ ایسا بھی کھڑا ہوگیا ہے جس نے محکمہ ماحولیات کی کوششوں پر پانی پھیرنا شروع کردیا ہے۔

یہ مسئلہ لاہور میں سوئی گیس کی بندش ہے جس کی وجہ سے نہ صرف شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے بلکہ اس کی وجہ سے گھروں میں کھانے پکانے کیلئے استعمال کی جانے والی لکڑی سے پیدا ہونے والا دھواں فضا میں آلودگی میں مزید اضافہ کر رہا ہے۔ سردیاں پوری طرح آئی بھی نہیں لیکن لاہور کے شہریوں کو گیس کی بندش کا ابھی سے سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ شدید سردی میں زندہ دلان لاہور کا کیا حال ہونے والا ہے ۔

جمعہ کے روز لاہور کے علاقے اچھرہ اور ڈیفنس سمیت متعدد علاقوں میں گیس کی بندش کے باعث شہریوں کو ناشتہ پکانے میں بھی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ کئی بچے بھوکے پیٹ ہی سکولوں کو گئے۔وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے لگ بھگ اپنے ہر خطاب میں یہ دعویٰ کیا جاتا ہے کہ پاکستان میں گیس کی قلت پر قابو پالیا گیا ہے ، اگر وزیر اعظم کے دعویٰ کو سچ مان لیا جائے تو پھر لاہور کے شہریوں کے حصے کی گیس کہاں جا رہی ہے؟ ۔

’’نئی شادی کر لینا صریح دھوکہ ہے ‘‘ مذہبی سکالر کی ایسی توجیہہ کہ دوسری شادی کی خواہش رکھنے والوں کو سب سے پہلے یہ مشکل کام کرنا ہوگا

دوسری جانب شہر کے پوش علاقوں یا خوشحال گھرانوں میں تو کھانے پکانے میں گیس سلنڈر استعمال کیے جا رہے ہیں لیکن پسماندہ علاقوں یا غریب گھروں میں کھانا پکانے کیلئے لکڑیاں ہی استعمال کی جا رہی ہیں جن سے اٹھنے والا دھواں سموگ کی شدت میں مزید اضافہ کرنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے، پنجاب اور وفاقی حکومت کو اس مسئلے کی طرف بھی سنجیدگی سے دیکھنا چاہیے۔

مزید : لاہور