مردم شماری میں کراچی کی آبادی کم دکھا کر جعل سازی کی گئی، ہم اسے تسلیم نہیں کرتے ، شہر قائد میں مردم شماری دوبارہ کرائی جائے : فاروق ستار

مردم شماری میں کراچی کی آبادی کم دکھا کر جعل سازی کی گئی، ہم اسے تسلیم نہیں ...
مردم شماری میں کراچی کی آبادی کم دکھا کر جعل سازی کی گئی، ہم اسے تسلیم نہیں کرتے ، شہر قائد میں مردم شماری دوبارہ کرائی جائے : فاروق ستار

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار نے کہا ہے کہ مردم شماری کے دوران کراچی کی آبادی کو جان بوجھ کر کم دکھایا گیا، ، کم آبادی دکھانے سے وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم ہوتی ہے جبکہ کراچی وفاقی حکومت کو 70 فیصد ٹیکس دیتا ہے، یہ مردم شماری سراسر جعلی ہے اور ہم وفاق کی اس جعل سازی کو تسلیم نہیں کرتے،مردم شماری دوبارہ ہونی چاہئے۔

پی ایس او، ٹوٹل اور شیل کا آئل گاڑیوں کے انجن متاثر کرتا ہے، کارروائی کی جائے،ہنڈا نے اوگرا کو شکایت بھجوا دی

کراچی میں پریس کانفرنس  سے خطاب کرتے ہوئے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کا کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کی معاشی شہ رگ ہے لہذا کراچی چلے گا تو پاکستان چلے گا۔ کراچی مرکز کو 70 فیصد ٹیکس اس لیے نہیں دیتا کہ روشنیوں کے شہر کو اندھیروں میں ڈبو دیا جائے،لوڈشیڈنگ سے کراچی کے انڈسٹری کو تباہ ہو رہی ہے لہذا گورنمنٹ کو چاہئے کہ فوری طور پر لوڈ شیڈنگ کو ختم کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ کراچی کو ملازمتوں میں بھی بہت کم حصہ دیا جا رہا ہے، کراچی کے ساتھ ساتیلے بیٹے جیسا سلوک نہ کیا جائے۔۔ فاروق ستار کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کے قیام کا مقصد ہی شہر کراچی کی شاہراہ ترقی پر گامزن کرنا ہے۔ ہم آئندہ الیکشن میں کامیابی حاصل کرنے کے لوگوں کے گھر گھر جائیں گے، کراچی کے حقوق کے لیے آخری حد تک جائیں گے۔

مزید : کراچی