سعودی لڑکیوں کے بارے میں ایسی شرمناک کتاب مارکیٹ میں آگئی کہ ملک میں کھلبلی مچ گئی، سعودی حکومت نے فوری دکانوں سے اٹھالی کیونکہ۔۔۔

سعودی لڑکیوں کے بارے میں ایسی شرمناک کتاب مارکیٹ میں آگئی کہ ملک میں کھلبلی ...
سعودی لڑکیوں کے بارے میں ایسی شرمناک کتاب مارکیٹ میں آگئی کہ ملک میں کھلبلی مچ گئی، سعودی حکومت نے فوری دکانوں سے اٹھالی کیونکہ۔۔۔

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) قدامت پسند سعودی معاشرہ، جہاں لڑکیوں کا حجاب کے بغیر گھر سے باہر نکلنا معیوب تصور کیا جاتا ہے، وہاں بک شاپس پر ایک ایسی کتاب کھلے عام بکنے لگی کہ دیکھتے ہی دیکھتے پورے ملک میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔

خلیج ٹائمز کے مطابق یہ نوجوان لڑکیوں کے بارے میں تحریر کیا گیا ایک ناول ہے جسے ایک ایوارڈ یافتہ مصنفہ نے لکھا ہے۔ ناول کا مرکزی کردار ایک نوجوان لڑکی ہے جو ہر جمعرات کے روز منعقد ہونے والی پارٹیوں میں شرکت کرتی ہے، جہاں نوجوان خواتین اپنے دکھ سکھ بانٹتی ہیں۔ اسے پڑھنے والے قارئین کا کہنا ہے کہ اس میں ایسا فحش مواد شامل ہے جس کا ایک روایتی مشرقی معاشرے میں تصور نہیں کیا جا سکتا۔ مصنفہ اور کالم نگار بدریہ البشر خواتین کے موضوعات پر لکھتی ہیں اور ان کا یہ تازہ ترین ناول ’تھرسڈیز وزیٹرز‘ کے نام سے منظر عام پر آیا تھا۔

” کیا آپ نے شادی کے بغیر ازدواجی تعلقات کے بارے میں سوچا ہے؟“عرب ملک کی خاتون میزبان نے دوران پروگرام ایسی فحش باتیں کردیں جان کر آپ کے بھی ہوش اڑ جائیں گے

وزارت ثقافت و اطلاعات کا کہنا تھا کہ ناول کے بارے میں شکایات سامنے آنے کے بعد اسے کتب خانوں سے اٹھالیا لیا گیا ہے۔ کتاب کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ایک سوشل میڈیا صارف جریر نے ویب سائٹ ٹویٹر پر لکھا ”اس طرح کی کتاب کو بک شاپ کے بچوں والے سیکشن میں فروخت کیا جا رہا تھا۔ میں نے اس کتاب کو تفصیلات دیکھے بغیر دیکھ لیا لیکن یہ ایک غلطی تھی۔“ ناول کی مصنفہ کی جانب سے اس صورتحال پر تاحال کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا۔

مزید : عرب دنیا