ایف بی آر: شعبہ انٹرنل آڈٹ لاوارث مسائل میں اضافہ، صورتحال سنگین

ایف بی آر: شعبہ انٹرنل آڈٹ لاوارث مسائل میں اضافہ، صورتحال سنگین

ملتان (نیوز رپورٹر )ایف بی آر کا شعبہ انٹرنل آڈٹ افسران سے محروم‘ ہوگیاملازمین کی موجیں لگ گئیں ملتان میں تعینات ڈپٹی ڈائریکٹر انٹرنل آڈٹ ظفر فاروقی کئی روز قبل ریٹائر ہو(بقیہ نمبر56صفحہ12پر )

گئے تھے جن کا چارج ابھی تک کسی کو نہیں دیا گیا ہے جبکہ لاہور میں بیٹھے ڈائریکٹر انٹرنل آڈٹ کے پاس ملتان کا اضافی چارج ہونے کی وجہ سے انہوں نے کبھی اس ریجن پر توجہ نہیں دی ملتان میں صرف17ویں سکیل کی اسسٹنٹ کمشنر سعدیہ ندیم موجود ہوتی ہیں جو اکثر اوقات رخصت پررہتی ہیں افسران نہ ہونے کے باعث بڑی کمپنیوں‘ کاروباری اداروں اور ڈسٹری بیوٹرز کی ٹیکس فائلیں آڈٹ سے بچی ہوئی ہیں ان لینڈ ریونیو افسران کروڑوں روپے ٹیکس والوں سے ملی بھگت کرکے 10فیصد ادائیگی پر معاملات طے کررہے ہیں کیونکہ انہیں معلوم ہے کہ آڈٹ آفیسرز کی عدم موجودگی کے باعث ان سے کوئی پوچھ گچھ نہیں ہوسکتی جبکہ انٹرنل آڈٹ کے انسپکٹرز افسران کی جانب سے احکامات نہ ملنے کے باعث کسی فائل بارے تفصیلات بھی نہیں لے سکتے ملازمین کا کہنا ہے کہ حکومت ریونیو ٹارگٹ پورا کرنا چاہتی ہے تو افسران و چھوٹے ملازمین کی خالی سیٹوں پر فوری تعیناتیاں کی جائیں۔

مسائل

مزید : ملتان صفحہ آخر