تیل مہنگا ، کرائےآؤٹ آف کنٹرول ، ٹراسپورٹر ز ، مسافر وں میں جھگڑے

تیل مہنگا ، کرائےآؤٹ آف کنٹرول ، ٹراسپورٹر ز ، مسافر وں میں جھگڑے

ملتان ( سٹاف رپورٹر)گیس ‘ بجلی کے بعد پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید اضافے سے مہنگائی کا ایک اورخوفناک طوفان آگیا ۔ سپرپٹرول کی قیمت فی لیٹر 5روپے اضافے کے بعد 98روپے فی لیٹر اور ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت فی لیٹر06.35روپے اضافے کے بعد 112روپے فی لیٹر ہو گئی ہے ۔ اس سے ٹرانسپورٹ کرایوں سمیت ہر چیز مہنگی ہو گئی ہے ۔ ٹرانسپورٹروں نے کرایوں میں 5سے10فیصد اضافہ کر دیا ہے ۔ اس پر مسافروں کی طرف سے احتجاج (بقیہ نمبر31صفحہ12پر )

کرنے کے واقعات پیش آئے جس پر ٹرانسپورٹ عملے کا کہنا تھا کہ حکومت اس کی ذمہ دار ہے ۔ حکومت نے پٹرول و ڈیزل کی قیمت بڑھائی ہے تو کرائے خود بخود بڑھناہی تھے ۔ ٹرانسپورٹرز کا اس میں کیا قصور نہیں ہے۔واضح رہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت نے گزشتہ ماہ سوئی گیس کی قیمتیں 143فیصد تک بڑھائی تھیں ۔ اس کے بعد چند روز قبل بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 01.79روپے اضافہ کر دیا اور اب پٹرول و ڈیزل کی قیمت میں مزید اضافہ کر دیا ہے جس سے مہنگائی کی ایک اور شدید لہر آئی ہے ۔ شہریوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر بجلی ‘ گیس اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم کی جائیں ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر