الٰہ آباد یونیورسٹی طلبہ یونین کے سابق رہنما کا قتل

الٰہ آباد یونیورسٹی طلبہ یونین کے سابق رہنما کا قتل

الہ آباد(این این آئی)کرنل گنج تھانہ علاقے میں واقع الٰہ آبادیونیورسٹی کے ہاسٹل میں رات گئے آپسی اختلافات کے باعث چندطالبعلموں نے سابق طلبہ رہنماکو گولی مار دی جسے زخمی حالت میں ایس آر این اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں علاج کے دوران وہ دم توڑ گیا۔بھارتی ٹی وی کے مطابق گزشتہ دنوں الٰہ آباد یونیورسٹی میں ہونیوالے طلبا یونین کے انتخابات میں پرچہ نامزدگی کے دن گولی باری کے واقعات کے بعد پولیس انتظامیہ نے اچیوتانند، ابھیشیک سنگھ، مائیکل، ابھیشیک سنگھ سونو، آکاش سنگھ اور اجیت یادو کی گرفتاری پر 25,25 ہزار روپے کے انعام کا اعلان کیا تھا۔ انہیں گرفتار کرنے کی ذمہ داری ایس ٹی ایف کو دی گئی تھی، پولیس ان کی تلاش میں سرگرداں تھی۔قتل کے واقعہ کے بعد الٰہ آباد یونیورسٹی کے یونین ہال کے سامنے ہزاروں کی تعداد میں طلبہ جمع ہوگئے۔علاقے میں کثیر تعداد میں سیکیورٹی دستے تعینات کردیئے گئے۔پولیس نے لاش قبضے میں لیکر اہل خانہ کے حوالے کردی۔الٰہ آباد یونیورسٹی کے وائس چانسلر رام سیوک دوبے نے بتایا کہ اچیوتانند 2013 میں یونیورسٹی کا طالب علم تھا۔ اس کے بعد وہ یہاں کا طالب علم نہیں رہا۔ یونیورسٹی ذرائع کے مطابق اچیوتانند 2013 میں جنرل سیکریٹری کے عہدے پر انتخاب لڑ چکا ہے۔

مزید : عالمی منظر