چین کیساتھ آزاد تجارتی معاہدے کی ترجیحی فہرست میں توسیع کیجائے، راولپنڈی چیمبر

چین کیساتھ آزاد تجارتی معاہدے کی ترجیحی فہرست میں توسیع کیجائے، راولپنڈی ...

راولپنڈی (کامرس ڈیسک)راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر ملک شاہد سلیم نے مطالبہ کیا ہے کہ چین کے ساتھ آزاد تجارتی معائدے کی ترجیحی فہرست میں توسیع کی جائے،دونوں ملکوں کے درمیان دو طرفہ تجارت کا حجم چودہ ارب ڈالر کے قریب ہے جس میں بارہ ارب ڈالر کی درآمدات اور صرف دوارب ڈالر کی برآمدات شامل ہیں ، وزیراعظم عمران خان اپنے دورہ چین میں ایف ٹی اے فہرست میں توسیع کا معاملہ اٹھائیں ، باہمی تجارت کا توازن پاکستان کے حق میں کرنے کے لیے برآمدی اشیاء کی تعداد بڑھائی جائے، ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کومعاشی چیلنجز کا سامنا ہے جن میں سے سب سے اہم برآمدات میں کمی ہے ہماری برآمدات کا حجم پچیس ارب ڈالر سے گر کر انیس ارب ڈالر ہو چکا ہے ، جس کی وجہ سے روپیہ دباو کا شکار ہے ۔ پاکستان کو اس وقت سب سے زیادہ چین کی جانب سے ڈمپنگ کا سامنا ہے ، سی پیک کی وجہ سے بھاری مشینری اور سامان چین سے امپورٹ ہو رہا ہے اس کا حل یہی ہے کہ پاکستان چین کے ساتھ آزاد تجارتی معائدے کی ترجیحی فہرست پر نظر ثانی کرتے ہو ئے اس میں تو سیع کر ے اور زیادہ برآمدی اشیاء کو فہرست میں شامل کرے انہوں نے کہا کہ برآمدات کے فروغ کے لیے ایکسپورٹ سے وابستہ صنعتوں کے لیے بجلی کی قیمت میں کمی کی جائے تا کہ پیداواری لاگت کم ہو ، اس کے ساتھ ساتھ کاروبار آسان بنانے کے لیے ٹیرف،سیلز ٹیکس اور ریگولیٹری ڈیوٹی میں کمی لائی جائے۔

مزید : کامرس