اردن میں سکول کے بچوں کی ہلاکت پر 2وزرا مستعفی

اردن میں سکول کے بچوں کی ہلاکت پر 2وزرا مستعفی

عمان(مانیٹرنگ ڈیسکآئی این پی)اردن کی وزیر سیاحت لینا عنب اور وزیر تعلیم عزمی محمود محافظہ نے بحیرہ مردار کی وادی میں سکول کے بچوں کی ہلاکت کے واقعے کے بعد اپنے عہدوں سے استعفیٰ دے دیا ہے۔وزیر سیاحت لینا عنب نے گزشتہ روز اپنے سرکاری ٹویٹر صفحے پر استعفے کا اعلان کیا ہے اور لکھا ہے کہ وہ ملک کی عمومی سیاسی فضا اور مادر وطن کو درپیش منفی حالات کے پیش نظر وزیراعظم عمر الرزاز کی حکومت میں اپنے عہدے سے استعفیٰ دے رہی ہیں البتہ فوری طور پر یہ واضح نہیں ہوا کہ آیا اردنی وزیراعظم نے ان کا استعفیٰ منظور کر لیا ہے یا نہیں۔گز شتہ ہفتے بحیرہ مردار کی وادی میں ایک واقعے میں10افراد ڈوب کر ہلاک،22 زخمی اور44لاپتہ ہوگئے تھے۔ہلاک اور لاپتہ ہونے والوں میں زیادہ تر سکول کے بچے تھے ۔اردن کے محکمہ شہری دفاع کے مطابق سکول کے بچے اور ان کے اساتذہ بحیرہ مردار کے علاقے میں سیر کے لیے گئے تھے،اس دوران میں طوفانی سیلاب آگیا اور وہ اس میں بہہ گئے تھے۔اس واقعے کے بعد اردنی حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بننا پڑا تھا۔

مزید : علاقائی