چین ، پاکستان کا شراکت داری بڑھانے ، سی پیک منصوبوں میں دیگر ممالک کو شامل کرنے پر اتفاق

چین ، پاکستان کا شراکت داری بڑھانے ، سی پیک منصوبوں میں دیگر ممالک کو شامل ...

بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک ،نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان نے چینی صدر شی جن پنگ سے ملاقات کی، جس میں باہمی پا ک چین باہمی شراکت داری کے تما م پہلو وں خصوصا پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے پر تبادلہ خیال کیا گیا، وزیراعظم عمران خان نے چینی صدر کو دورہ پاکستان کی دعوت دی جو انہوں نے قبول کرلی۔تفصیلا ت کے مطابق جمعہ کے روز وزیراعظم عمران خان نے چین کے صدر شی جن پنگ سے چین کے گریٹ ہال میں ملاقات کی جس میں دو طرفہ امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں پاک چین اقتصادی راہداری سمیت دو طرفہ تعلقات مضبوط کرنے کے امور پر بھی بات ہوئی۔وزیر اعظم کا کہناتھا کہ صدر شی جن پنگ کا وژن اور لیڈرشپ ہمارے لیے مشعل راہ ہے۔پاکستان کیلئے چین کی ترقی متاثر کن ہے، جس طرح چین نے بدعنوانی اور غربت کا خاتمہ کیا اس کی مثال نہیں ملتی، پاکستان غربت اور بدعنوانی کے خاتمے کیلئے چین سے سیکھنا چاہتا ہے۔پاکستان اور چین کے درمیان وفود کی سطح پر بھی مذاکرات ہوئے، وفاقی وزرا میں اسدعمر، شاہ محمود قریشی، خسروبختیار، شیخ رشید، وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال، سیکریٹری خارجہ اور پاکستانی سفیر شامل ہیں۔ وزیر خارجہ وانگ ژی سمیت چین کے اعلیٰ حکام بھی موجود تھے،ذرائع کے مطابق اس دورے کے دوران پاکستان کو چین سے سی پیک منصوبوں کے لیے 6 ارب ڈالرز کا پیکج جبکہ ڈیڑھ ارب ڈالرز قرضہ ملنے کا امکان ہے اور چین سے ملنے والے ڈیڑھ ارب ڈالرز اسٹیٹ بینک میں جمع کرائے جائیں گے۔دونوں وفود کے درمیان درآمدات اور برآمدات کے حجم کو برابر کرنے پر بات چیت کی گئی جب کہ اقتصادی راہداری منصوبے میں دیگر ممالک کو شامل کرنے کے اقدامات پر بھی اتفاق کیا گیا۔پاکستان وفد کی جانب سے خواہش کا اظہار کیا گیا کہ پاکستان چین کے غربت اور کرپشن کے خاتمے پر اقدامات پر مدد حاصل کرنا چاہتا ہے اوزراعت کے حوالے سے چینی ماہرین کی ٹیمیں بھی جلد پاکستان آئیں گی۔ وزیراعظم نے پرتپاک استقبال پر چین کے صدر سے اظہار تشکر کیا۔چینی صدر شی جن پنگ نے کہا دو طرفہ مضبوط تعلقات کو مزید فروغ مل رہا ہے، دونوں ممالک کی شراکت داری خطے کے مفاد میں ہے۔ وزیراعظم عمران خان اور چینی صدر شی جن پنگ کی ملاقات میں پاک چین تزویراتی شراکت داری کو مزید وسعت دینے، پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے سمیت اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، دونوں رہنماوں نے خطے کو درپیش مشترکہ چیلنجز سے نمٹنے کیلئے باہمی شرکت داری کو مضبوط بنانے پر اتفاق کیا۔ دونوں ملکوں کے درمیان زراعت اور سرمایہ کاری کے حوالے سے مشترکہ ورکنگ گروپ بنانے پربھی اتفاق کیا گیا۔ جمعہ کو وزیراعظم عمران خان چینی صدر شی جن پنگ سے علیحدہ اور وفود کی سطح پر مذاکرات کیے۔وزیراعظم نے چین میں مہمان نوازی پر چینی صدر کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہاکہ چینی صدر کا ویژن اور قیادت رول ماڈل ہے، جبکہ چین کی ترقی پاکستان اور پوری دنیا کے لیے مثال ہے۔عمران خان نے کہا کہ جس طرح چین نے غربت اور کرپشن پر قابو پایا ہے کسی ملک نے ایسا نہیں کیا، پاکستان غربت اور کرپشن کے خاتمے کے لیے چین کے تجربے سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے۔چینی صدر نے کہا کہ پاکستان اور چین کے تعلقات میں مزید استحکام آرہا ہے جس سے نہ صرف دونوں ممالک بلکہ پورے خطے کا فائدہ ہوگا۔3 نومبر کو ہی وزیراعظم عمران خان کی چین کے سرمایہ کاروں اور کمپنیوں کے سربراہوں سے ملاقات طے ہے۔4 نومبر کو وزیراعظم سینٹرل پارٹی اسکول میں خطاب کے بعد شنگھائی روانہ ہوں گے، جہاں وہ چائنا انٹرنیشنل امپورٹ ایکسپو میں شرکت کریں گے۔چین کے صدر 4 نومبر کو امپورٹ ایکسپو میں شریک رہنماؤں کے اعزاز میں ضیافت دیں گے۔وزیراعظم عمران خان 5 نومبر کو شنگھائی میں ویت نام کے وزیراعظم سے ملاقات کریں گے جبکہ اسی روز وہ شنگھائی کی مقامی قیادت سے ملاقات اور پاکستان بزنس فورم سے بھی خطاب کریں گے اور پھر وطن واپس روانہ ہوں گے۔ وزیراعظم عمران خان سے ایشیا ترقیاتی بینک کے صدر جی لی کن نے ملاقات کر کے پاکستان میں ترقیاتی منصوبوں سے متعلقہ امور پر تبادلہ خیال کیا ۔ ملاقات میں پاکستان میں ترقیاتی منصوبوں سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں وفاقی وزراء، اسد عمر، شاہ محمود قریشی، شیخ رشید، خسرو بختیار، عبدالرزاق داؤد، وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال اور سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ موجود تھے۔ وزیراعظم عمران خان سے چین کے عالمی امور کے وزیر سونگ تاؤ نے ملاقات کی، ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق جمعہ کو چین کے عالمی امور کے وزیر سونگ تا? نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ چین پاکستان کی خارجہ پالیسی کا اہم ستون ہے۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے چینی ہم منصب وانگ ای سے ملاقات کی۔ ملاقات چین کی تاریخی عمارت گریٹ ہال آف بیجنگ میں ہوئی۔ ملاقات میں شاہ محمود قریشی نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چین پاکستان کی خارجہ پالیسی کا اہم ستون ہے، ملاقات میں سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ اور چین میں پاکستانی سفیر مسعود خالد بھی موجود تھے۔

عمران دورہ

مزید : صفحہ اول