حفاظتی انتظامات کے بغیر موٹر سائیکل فروخت پر پابند ی کیس میں کمپنیوں کے مالکان ذاتی حیثیت میں طلب

حفاظتی انتظامات کے بغیر موٹر سائیکل فروخت پر پابند ی کیس میں کمپنیوں کے ...

لاہور (نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے حفاظتی انتظامات کیے بغیر موٹر سائیکل کی فروخت پر پابندی لگوانے کے لیے درخواست پر موٹر سائیکل بنانے والی کمپنیز کے ملکان کو9 نومبر کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا ،سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ لاہور شہری میں ٹریفک کی روانی متاثر ہونے کے باعث کمپنیز مالکان پیش نہیں ہوسکے ہیں۔عدالت عالیہ کے سنگل بنچ نے ینگ ڈاکٹر ایسوسی ایشن کی درخواست پر سماعت کی جس میں وفاقی حکومت، چیف سیکرٹری پنجاب، موٹر سائیکل بنانے والی کمپنیز سمیت دیگرکو فریق بنایا گیا ہے، درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ موٹرسائیکل کے پہیہ میں کپڑا اور بچوں کے پاؤں آنے کی وجہ سے حادثات ہوتے ہیں جبکہ موٹر سائیکل بنانے والی کمپنیوں کی جانب سے موٹر سائیکل پر حفاظتی انتظامات نہیں کئے جا رہے ہیں، درخواست گزار وکیل نے اعتراض اٹھایا کہ حفاظتی انتظامات نہ ہونے وجہ سے حادثات میں اضافہ ہو رہا ہے جبکہ موٹرسائیکل بنانے والی کمپنیز خفاظتی انتظامات نہیں کر رہی ہے ،درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ عدالت حفاظتی انتظامات کیے بغیر موٹر سائیکل کی فروخت پر پابند لگانے کا حکم دے۔

ذاتی طلب

مزید : صفحہ آخر