ٹریفک قوانین اورہیلمٹ پابندی پر سختی سے عمل در آمد کرانے کا حکم

ٹریفک قوانین اورہیلمٹ پابندی پر سختی سے عمل در آمد کرانے کا حکم

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب بھر میں ہیلمٹ کی پابندی پر عملدرآمد کے لئے دائر درخواست پنجاب کے 36 اضلاع میں ٹریفک قوانین پر سختی سے عمل در آمد کرنے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے تمام اضلاع کے سی ٹی اوز سے ایک ہفتہ میں عمل درآمد رپورٹ طلب کر لی۔ لاہور ہائیکورٹ نے کمال حیدر ایڈوکیٹ کی درخواست پر سماعت کی ،درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا شہر لاہور میں ٹریفک رولز پر پابند کرنے سے حادثات میں کمی آئی ہے اور قوانین پر پابندی کرنے سے ٹریفک کی روانی بہتر ہوئی ہے ۔فاضل جج کے استفسار پر بتایا گیا کہ عدالت نے جن اضلاع کے سی ٹی اوز کو طلب کررکھا تھا ،وہ احتجاجی مظاہروں کے باعث عدالت نہیں پہنچ سکے ۔درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ پنجاب بھر میں ہیلمٹ استعمال کرنے اور ٹریفک قوانین پر سختی سے پابندی کروانے کا حکم دیاجائے ،ہائیکورٹ نے قرار دیا کہ ہیلمٹ سے متعلق عدالتی حکم پر من و عن عمل کیا جائے اور پولیس اور وارڈنز بھی ہیلمٹ پہنیں ،عدالت نے ریمارکس دیئے کہ 70فیصد سر پر چوٹ لگنے کے حادثات کم ہوچکے ہیں ،عدالت نے حکم دیا کہ آئی جی پنجاب عدالتی حکم پر فوری عمل درآمد کروائیں ۔عدالت نے سیکرٹری ہیلتھ سے لاہور میں ہیلمٹ کے استعمال سے حادثات کی روک تھام کے حوالے سے رپورٹ بھی طلب کرتے ہوئے درخواست پر مزید کارروائی ایک ہفتے کے لیے تک ملتوی کردی گئی ۔

عملدرآمد

مزید : صفحہ آخر