سرگودھا ، میانی قبرستان اراضی پر دکانیں مسمار کر کے رپورٹ پیش کر نے کا حکم

سرگودھا ، میانی قبرستان اراضی پر دکانیں مسمار کر کے رپورٹ پیش کر نے کا حکم

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ میں تحصیل بھیرہ ضلع سرگودھا میں میانی قبرستان کی اراضی پر قبضہ کے خلاف درخواست پرقبرستان کی دو کنال اراضی پر قائم دکانیں مسمار کر کے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت نے راؤ شفیق کی درخواست پر سماعت کی،درخواست گزار کی جانب سے عارف گوندل ایڈووکیٹ پیش ہوئے اور موقف اختیار کیا کہ تحصیل بھیرہ ضلع سرگودھا میں میانی قبرستان کی دوکنال اراضی پر غیر قانونی دوکانیں تعمیر کی گی ہیں،قانون کے مطابق سرکاری اراضی پر دوکانیں قائم نہیں کی جا سکتی ہیں اور میانی قبرستان کی اراضی پر با اثر افراد نے غیر قانونی قبضہ کیا ہوا ہے، عبدالمجید نے سابق ایم این اے ندیم افضل چن کی مدد سے قبرستان کی اراضی پر دوکانیں قائم کیں ہوئی ہیں،وکیل نے استدعا کی کہ عدالت قبرستان کی اراضی پر قائم دکانیں مسمار کرنے کا حکم دے،عدالت نے تمام دلائل سننے کے بعد قبرستان کی اراضی پر قائم دکانیں مسمار کر کے رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

سرگودھا ،میانی قبرستان

مزید : صفحہ آخر