بڑی شخصیات کے لئے راولپنڈی ہمیشہ المناک اور دردناک رہا

بڑی شخصیات کے لئے راولپنڈی ہمیشہ المناک اور دردناک رہا

راولپنڈی (سٹاف رپورٹر)پاکستان کی بڑی قومی اور سیاسی شخصیات کے لئے راولپنڈی شہر ہمیشہ المناک اور دردناک رہاراولپنڈی کی تاریخ میں لیاقت باغ کے اندرپاکستان کے پہلے وزیر اعظم لیاقت علی خان سے شروع ہونے والی خون کی ہولی کی فہرست میں مولانا سمیع الحق کے نام کا بھی اضافہ ہو گیاقبل ازیں لیاقت علی خان کے بعد سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹوکو راولپنڈی میں پھانسی اور انکی صاحبزادی و سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کو27دسمبر2007کولیاقت باغ راولپنڈی میں بڑے عوامی اجتماع کے بعد دہشت گردی کی بھینٹ چڑھانے کے 11سال بعد مولانا سمیع الحق کو گزشتہ روز ان کے گھر میں چھریوں کے پے درپے وارکر کے ابدی نیند سلا دیاگیااس تناظر میں راولپنڈی بڑی قومی و سیاسی شخصیات کی زندگی کا اختتامی شہر ثابت ہوا ۔

مزید : صفحہ آخر