ایف آئی اے کا بدین میں اومنی گروپ کی ملکیتی 3 شوگر ملز پر چھاپہ

ایف آئی اے کا بدین میں اومنی گروپ کی ملکیتی 3 شوگر ملز پر چھاپہ

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے بدین میں قائم اومنی گروپ کی مبینہ ملکیت میں کھوسکی، تلہار اور ماتلی کے علاقوں میں موجود3 شوگر ملزپر گزشتہ رات گئے چھاپے مارکرکھوسکی شوگر ملز کی حدود میں قائم سندھ بینک کی ایک برانچ سے 2 سال قبل سامنے آنیوالے 70 سے 75 کروڑ روپے کی مبینہ سکیم سے متعلق ریکارڈ بھی ضبط کرلیا۔اومنی گروپ سے تعلق رکھنے والے انور مجید، ان کے بیٹے، سابق صدر آصف زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور کیخلاف مذکورہ چھاپوں کو منی لانڈرنگ کیس میں پیش رفت کا حصہ بتا یا جارہا ہے۔آصف زرداری کے قریبی ساتھی انور مجید اور ان کے بیٹے عبدالغنی مجید اربوں روپے کے جعلی اکاؤنٹس کیس میں مرکزی ملزم ہیں جس کی تحقیقات ایف آئی اے کر رہا ہے۔ذرائع کے مطابق ایف آئی اے حکام نے شوگر مل کے حکام سے عدالت عظمیٰ کی جانب سے کیس لینے کے بعد ’گمشدہ‘ ہونیوالے چینی کے اسٹاک کے حوالے سے پوچھ گچھ کی۔اس سے قبل ایف آئی اے نے پیرا ملٹری فورسز کے ہمراہ کھو سکی شوگر مل پر 26 اگست کو چھاپہ مارا تھا۔حکام کا کہنا تھا چھاپے کے دوران ایف آئی اے کی ٹیم نے 7 کلاشنکوف، 4 سیمی آٹومیٹک رائفلز، 2 ڈیجیٹل ویڈیو ریکارڈرز، 27 ہارڈ ڈسک، ایک ورچوئل اسٹوریج ڈیوائس اور مالیاتی دستاویزات بر آمد کیے تھے۔مقامی حکام نے شوگر ملز پر ہونیوالے حالیہ چھاپوں کے حوالے سے رائے دینے سے گریز کیا۔

شوگر ملز چھاپہ

مزید : صفحہ آخر