عارضی دنی کو مستقل ٹھکانہ سمجھنے والے خسارے میں رہیں گے : مولانا طارق جمیل

عارضی دنی کو مستقل ٹھکانہ سمجھنے والے خسارے میں رہیں گے : مولانا طارق جمیل

رائیونڈ ،لاہور(نمائندہ پاکستان،جنرل رپورٹر، آئی این پی)رائیونڈ عالمی تبلیغی اجتماع کا پہلا مرحلہ بعد از نماز عصر شروع ہو گیا۔چار ڈویڑن لاہور،ملتان،کوئٹہ ،پشاور سے فرزندان اسلام کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔ اجتماع کا پہلا مرحلہ اتوار تک جاری رہے گا .جس میں انڈیا،بنگلہ دیش و دیگر ممالک سے مذہبی سکالرز بھی شرکت کر رہے ہیں۔ اجتماع کا پہلا مرحلہ اتوار کو اجتماعی دعا کے بعد اختتام پذیر ہو گا۔عالمی تبلیغی اجتماع کے پہلے مرحلے میں چار ڈویژن ملتان،کوئٹہ،لاہوراور پشاور سے کثیر تعداد میں فرزندان اسلام شرکت کر رہے ہیں۔تبلیغی اجتماع کے پہلے مرحلے میں جمعۃ المبارک کے دن نماز جمعہ مولانا معاذ نے پڑھائی جبکہ نماز جمعہ کے بعد ممتاز عالم دین مولانا طارق جمیل نے بیان کیا،جنہوں نے اپنے طویل بیان میں اللہ تعالیٰ کی عظمت اور وحدانیت پر مفصل خطاب کیا ،انہوں نے کہا کہ جب تک امت سب کچھ اللہ کی طرف سے ہی ہونے کا یقین دل میں پختہ نہیں کرلیتی ،وہ یونہی بھٹکتی رہے گی ،انہوں نے کہا کہ اللہ بن مانگے ہدائت نہیں دیتا ،دنیا و آخرت کی کامیابیاں آخری بنی ؐ کے طریقوں کے مطابق زندگی گزارنے میں ہے ،دلوں میں اللہ اور اس کے رسولؐ کی محبت پیدا کرنے اور دوسروں کو معاف کرنے والے ہی اللہ کے صحیح بندے ہیں ،اپنے خطاب میں مولانا طارق جمیل نے مزید کہا کہ تبلیغی اجتماع خالص اللہ کی رضاحاصل کرنے اور اپنے گناہوں کی توبہ کرنے کیلئے تربیت گاہ ہے ، عارضی دنیا کو مستقل ٹھکانہ سمجھنے والے خسارے میں رہیں گے،ہمیں آخرت کی تیاری کرنے کیلئے دنیا میں بھیجا گیا ہے ،دنیاوی کاموں سے وقت نکال کر نبی اکرم کے بتائے ہوئے راستوں پر چلنے کی ضرورت ہے ، جوشخص نبی کریم ؐ کا کامل متبع ہو وہ حقیقی اللہ والاہے اور جوشخص اتباع سنت سے جس قدر دور ہو وہ قرب الٰہی سے بھی دور ہے،جو شخص اللہ تعالی سے محبت کا دعویدار ہے اور سنت رسولؐ کی مخالفت کرے وہ جھوٹا ہے، اسلام آفاقی مذہب ہے،جورنگ و نسل سے ماوراء ہے،جغرافیائی حدود سے بالا تر ہے وہ کسی زمان و مکان میں محدود نہیں ۔جمعہ کو اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ جوشخص نبی کریم ؐ کا کامل متبع ہو وہ حقیقی اللہ والا اور جوشخص اتباع سنت سے جس قدر دور ہو وہ قرب الٰہی سے بھی دور ہے، مفسرین نے تحریر کیا ہے کہ جو شخص اللہ تعالی سے محبت کا دعویدار ہے اور سنت رسولؐ کی مخالفت کرے وہ جھوٹا ہے ۔ ،نماز فجر کے بعد مولانا عبدالرحمن بمبائی کا بیان ہوا جبکہ عصر کی نماز کے بعد مولانا یعقوب اور مغرب کی نماز کے بعد مولانا احمد لاٹ نے بیان کیا۔مولانا طارق جمیل کا سالانہ بیان سننے کیلئے لاکھوں کی تعداد میں لوگ تبلیغی میدان میں جمع تھے ،آج ہفتہ کو نماز فجر کے بعدمولانا اسماعیل نے خطاب کیا ۔بعد نماز عصر مولانا ظہر ،بعد نماز مغرب مولانا احمد انصاری، اوربعد نماز عشاء مولانا ابراہیم خطاب فرمائیں گے۔کل اتوار کو امیر جماعت برزگ عالم دین الحاج عبدالوہاب انتہائی کمزور ی کے باعث اجتماع کے پہلے مرحلہ کے آخری روز دعا کرائیں گے۔ آسیہ مسیح کے فیصلہ پر ملک بھر میں دھرنوں اور سڑکیں بلاک ہونے کی وجہ سے اجتماع میں شرکاء کی آمد محدود رہی ، گزشتہ سالوں کی نسبت کم رش دیکھنے کو ملا ،گزشتہ برسوں کی نسبت زیادہ سکیورٹی دیکھنے کو نظر آئی تبلیغی اجتماع کے داخلی اور خارجی راستوں پر پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی واک تھرو گیٹ لگائے گئے کسی کو بھی چیکنگ کے بغیر پنڈال میں داخل ہونے نہیں دیا جا ریا ، تحریک لبیک کی طرف سے دئیے گئے دھرنوں کی وجہ سے کئی سو بسیں تبلیغی اجتماع میں شامل نہیں ہوسکیں ،صوبائی وزیر معدنیات حافظ عمار یاسر ،محکمہ داخلہ پنجاب سمیت تمام محکموں کی حکام کاپنڈال کا جائزہ ، ہدایات بھی جاری کیں۔مسلم لیگ ن کے صوبائی رہنماء ایم پی اے مرزا جاوید سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پر ویز الہی اور دیگر سیاسی شخصیات دعا میں شرکت کریں گے۔

تبلیغی اجتماع ؍ طارق جمیل

تبلیغی اجتماع خالص اللہ کی رضاحاصل کرنے اور اپنے گناہوں کی توبہ کرنے کیلئے تربیت گاہ ہے ،

مزید : صفحہ آخر