شہید حکیم سعید تحقیق و جستجو کے زبردست داعی تھے،پروفیسر شبیب الحسن

شہید حکیم سعید تحقیق و جستجو کے زبردست داعی تھے،پروفیسر شبیب الحسن

کراچی (اسٹاف رپورٹر) ہمدرد یونی ورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شبیب الحسن نے کہا ہے کہ مختلف موضوعات پر منعقدہ 21 ویں آئی ای ای ای (IEEE ) کانفرنس، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے ابھرتے ہوئے شعبوں میں شرکائے کانفرنس کے علم و بصیرت میں یقیناًاضافے کا باعث بنے گی۔ وہ گزشتہ روز ہمدرد یونی ورسٹی کے زیر اہتمام اور انٹرنیشنل انسٹی ٹیوٹ اوف الیکٹریکل اینڈ الیکٹرونکس انجینئرز (IEEE ) امریکہ کے کراچی سیکشن کے تعاون سے منعقدہ بین الاقوامی کانفرنس کے افتتاحی اجلاس سے بیت الحکمہ آڈیٹوریم، مدینتہ الحکمہ، ہمدرد یونی ورسٹی ، کراچی میں خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمدرد یونی ورسٹی کے بانی شہید حکیم محمد سعید ہر شعبے میں تحقیق و جستجو کے بڑے داعی تھے اور ہمدرد یونی ورسٹی کو تحقیق پر مبنی ریسرچ بیسڈ علم گاہ دیکھنے کے متمنی تھے۔ یہی وجہ ہے کہ انہوں نے ’’سائنس اور مسلم سائنسدانوں کی تحقیقات اور دریافتوں کو اجاگر کرنے کے لیے متعدد ملکی اور بین الاقوامی کانفرنسیں منعقد کرائیں۔ حکیم صاحب کے مشن اور وژن کو پیش نظر رکھتے ہوئے ہمدرد یونی ورسٹی تحقیقی سرگرمیوں اور سائنسی ریسرچ کو فروغ دینے میں ملک میں ہر اول دستے کا فریضہ انجام دے رہی ہے۔ انہوں نے کانفرنس میں آنے والے ملکی اور غیرملکی اسکالرز اور محققین کا ان کی آمد پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ممتاز سائنسی دماغوں کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرنے کا ہمدرد یونی ورسٹی کا مقصد ہے کہ یہ سائنسداں اور اسکالرز اپنے اپنے علم و مشاہدات کو ایک دوسرے سے شیئر کریں جو مجموعی طور پر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے فروغ کا باعث بنے گا۔ اس سے قبل ہمدرد یونی ورسٹی کی فیکلٹی اوف انجینئرنگ سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی (FEST ) کے ڈین پروفیسر ڈاکٹر والی الدین نے کانفرنس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ حال ہی میں ہمدرد یونی ورسٹی نے ایک کلیدی کامیابی حاصل کی ہے کہ اس فیکلٹی کے پہلے بیج کی پاکستان انجینئرنگ کونسل نے بطور انجینئرز توثیق کر دی ہے اور 92 انجینئرنگ پروگرامز میں سے صرف چار پروگرامز کی کونسل نے سندھ میں توثیق کی ہے جن میں ایک ہمدرد یونی ورسٹی کا پروگرام ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمدرد یونی ورسٹی دیگر یونی ورسٹیوں کے فیکلٹی ممبران کو بھی ٹریننگ کی سہولیات مہیا کر رہی ہے۔ انسٹی ٹیوٹ اوف الیکٹریکل اینڈ الیکٹرانکس انجینئرز (IEEE )، امریکہ کے کراچی سیکشن کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر شہاب صدیقی نے کہا کہ ایسی کانفرنسیں محققین کو طاقت بخشتی ہیں کیونکہ یہ کانفرنسیں محققین کی تحقیقات کو ابلاغ دیتی ہیں۔ اسی لیے ان کا انسٹی ٹیوٹ نہ صرف ایسی کانفرنسوں کی حوصلہ افزائی کرتا ہے بلکہ ہر ممکن تعاون بھی مہیا کرتا ہے۔ انسٹی ٹیوٹ کی جانب سے کانفرنسوں کا یہ سلسلہ جاری رہے گا اور 2019 ، 2020 اور ان کے آگے کے برسوں میں بھی ایسی کانفرنسیں منعقد ہوتی رہیں گی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر