سندھ پولیس نے ایک ماہ میں 8ہزار سے زائد ملزمان کو گرفتار کر لیا

سندھ پولیس نے ایک ماہ میں 8ہزار سے زائد ملزمان کو گرفتار کر لیا

کراچی (اسٹاف رپورٹر)آئی جی سندھ ڈاکٹرسید کلیم امام نے سندھ پولیس بشمول محکمہ انسداد دہشت گردی سندھ کی جرائم کیخلاف مجموعی کارکردگی رپورٹ کا جائزہ لیتے ہوئے ہدایات جاری کیں کہ جرائم کیخلاف جاری جنگ کو مزید تیز اور مربوط بنایا جائے اور اس ضمن میں پاکستان رینجرزسندھ اور قانون نافذ کرنیوالے دیگراداروں سے تمام تر رابطوں کو مضبوط پائیدار اور نتیجہ خیز بنایا جائے ۔انہوں نے بہترین اور عمدہ کارکردگی پر ایڈیشنل آئی جی کراچی ڈاکٹر امیرشیخ کو شاباش کا پیغام دیتے ہوئے کہا کہ انسداد جرائم کے ضمن میں جاری جملہ اقدامات کیلئے درکار وسائل، لاجسٹک سپورٹ ودیگر ضروریات کو ترجیحی بنیادوں پر یقینی بنایا جائیگا۔ لہٰذا وہ بلاکسی دباؤ جرائم کیخلاف جاری جملہ اقدامات کو جاری رکھیں۔12ستمبر2018 سے لیکر 31اکتوبر2018 تک کی سندھ پولیس کارکردگی رپورٹ کے مطابق 245پولیس مقابلوں کے دوران 143گروہوں کا خاتمہ،17ڈکیت/اسٹریٹ کریمنلز ہلاک3022ڈکیت/ملزمان،11دہشت گرد،05اغواکار،3395مفرورملزمان،1518اشتہاری ملزمان،300اسٹریٹ کریمنلزسمیت 8251ملزمان کو گرفتار کیا گیا ۔کراچی پولیس نے 111پولیس مقابلے104گروہوں کا خاتمہ،11ڈکیت/کریمنلزہلاک،03اسٹریٹ کریمنلزہلاک،1669ڈکیت/کریمنلز،251اسٹریٹ کریمنلز،1097مفرورملزمان،117اشتہاری ملزمان،05اغواکاروں سمیت 3139ملزمان کو گرفتار کیا ۔حیدرآباد پولیس نے 25 پولیس مقابلے،03ڈکیت/کریمنلزہلاک،943ڈکیت/ملزمان،06دہشت گرد،20 گروہوں کا خاتمہ،12اسٹریٹ کریمنلز،672 مفرورملزمان،306 اشتہاری ملزمان،1939 مجموعی گرفتاریاں،میرپورخاص پولیس،03 پولیس مقابلے،05گروہوں کا خاتمہ،147ڈکیت/ملزمان،15 اسٹریٹ کریمنلز،58 مفرورملزمان09 اشتہاری ملزمان،229 مجموعی گرفتاریاں،شہیدبینظیرآباد پولیس،20 پولیس مقابلے،35ملزمان رنگے ہاتھوں،02 دہشت گرد،510 مفرورملزمان،132 اشتہاری ملزمان679 مجموعی گرفتاریاں،سکھرپولیس،43 پولیس مقابلے،77ڈکیت/ملزمان،14گروہوں کاخاتمہ،10اسٹریٹ کریمنلز،393 مفرورملزمان،282 اشتہاری ملزمان،762 مجموعی گرفتاریاں،لاڑکانہ پولیس،43 پولیس مقابلے،118ڈکیت/ملزمان،12 اسٹریٹ کریمنلز،665 مفرورملزمان،672 اشتہاری ملزمان،1467 مجموعی گرفتاریاں جبکہ محکمہ انسداد دہشت گردی سندھ:نے 33ڈکیت/ملزمان،03دہشت گردوں سمیت مجموعی طور پر 36ملزمان کو گرفتا ر کیا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر