یہ یمنی لڑکی جس کی تصویر نے پوری دنیا کو ہلا کر رکھ دیا، اب کہاں ہے؟ جان کر ہر آنکھ نم ہوجائے

یہ یمنی لڑکی جس کی تصویر نے پوری دنیا کو ہلا کر رکھ دیا، اب کہاں ہے؟ جان کر ہر ...
یہ یمنی لڑکی جس کی تصویر نے پوری دنیا کو ہلا کر رکھ دیا، اب کہاں ہے؟ جان کر ہر آنکھ نم ہوجائے

  

صنعاء (مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ دنوں ایک یمنی بچی کی تصویر سوشل میڈیا پر سامنے آئی جو خوراک کی کمی کی باعث ہڈیوں کا ڈھانچہ بنی نظر آتی ہے ۔ اس المناک تصویر کو دیکھ کر لوگوں کی آنکھوں میں آنے والے آنسو ابھی خشک نہیں ہوئے تھے کہ یہ اندوہناک خبر آ گئی ہے کہ یہ بدقسمت بچی اب دنیا میں نہیں رہی۔

گزشتہ ہفتے امل حسین نامی اس بچی کی خبر عالمی میڈیا کی زینت بنی تھی، جسے دیکھنے والوں نے یمن میں برپا قحط سالی کی تصویر قرار دیا۔ گزشتہ روز اس بچی کے اہلخانہ نے بتایا ہے کہ ایک پناہ گزین کیمپ میں اس کی موت ہوگئی ہے۔ نیویارک ٹائمز کے مطابق بچی کی موت جس پناہ گزین کیمپ میں ہوئی ہے وہ اقوامی متحدہ کے ادارے یونیسف کے ایک مقامی کلینک سے تقریباً چار میل کی دوری پر واقع ہے۔ امل کی غمزدہ والدہ مریم علی نے ایک مقامی اخبار سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ” میرا دل ٹوٹا ہوا ہے ، میری بیٹی ہمیشہ مسکراتی رہتی تھی ۔ اب مجھے اپنے دوسرے بچوں کی زندگی کی فکر ہے۔“

یونیسف کے مقامی کلینک کے ڈاکٹروںکا کہنا ہے کہ بچی کو جب ان کے پاس لایا گیا تو وہ خوراک کی مسلسل کمی کے باعث بدترین نقاہت کی شکار تھی۔ اس کا معدہ کوئی بھی چیز ہضم کرنے کے قابل نہیں تھا اور اسے جو بھی کھلایا جاتا تھا وہ قے کر دیتی تھی۔ دراصل وہ گزشتہ تین سال سے بھوک برداشت کر رہی تھی اور اب اس کا معدہ کوئی بھی چیز ہضم کرنے کے قابل نہیں رہا تھا۔ اگرچہ ڈاکٹروں نے اس کی زندگی بچانے کیلئے ہر ممکن کوشش کی لیکن اس کے کمزور جسم میں اب اتنی طاقت نہیں رہی تھی کہ بھوک اور بیماری کا مزید مقابلہ کر پاتی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس