انسداد منشیات کی خصوصی عدالت میں نئے جج کو تعینات کر دیا گیا

انسداد منشیات کی خصوصی عدالت میں نئے جج کو تعینات کر دیا گیا

  



لاہور(نامہ نگار)وفاقی حکومت نے انسداد منشیات کی خصوصی عدالت میں نئے جج کی تعیناتی کی منظوری دے دی،انسداد منشیات کی عدالتوں کے رجسٹرار کا کہناہے کہ سیشن جج شاکر حسین کوانسداد منشیات کی خصوصی عدالت کا جج تعینات کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیاہے،چارج سنبھالنے کے بعد شاکر حسین مسلم لیگ (ن)کے راہنمارانا ثناء اللہ اوردیگر مقدمات کی سماعت کریں گے،یادرہے کہ انسداد منشیات کی عدالت میں دو ماہ سے جج کی تعیناتی(بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

 زیر التوا ء تھی،انسداد منشیات عدالت کے جج کی عدم تعیناتی کے باعث سپیشل جج سینٹرل خالد بشیر کیسز کی سماعت کرتے رہے ہیں۔ادھرانسداد منشیات کی خصوصی عدالت نے رانا ثناء اللہ سمیت دیگر ملزموں کے خلاف منشیات سمگلنگ کیس میں رانا ثناء اللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں توسیع 14 روز کی توسیع کر دی،عدالت نے رانا ثناء اللہ کو 16 نومبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم جاری کردیاہے،سپیشل جج سنٹرل خالد بشیر نے بطور ڈیوٹی جج کیس کی سماعت کی،کیس کی سماعت شروع ہوئی توتفتیشی افسر کا کال ڈیٹا ریکارڈ عدالت میں پیش کیا گیا،متعلقہ فون کمپنی کے نمانئدے نے تفتیشی افسر کی سی ڈی آر عدالت میں پیش کی۔پیشی کے موقع پرسابق وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے کہا کہ آزادی مارچ اپنے مقاصد میں کامیاب ہوگا،ہر محب وطن شہری کو آزادی مارچ میں شریک ہونا چاہیے۔مسلم لیگ (ن)کے کارکن اسلام آباد کے دھرنے میں شریک ہوں،ٹرین حادثے کے بعد وزیراعظم عمران خان اور شیخ رشید کو استعفی دے دینا چاہیے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر