کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل سے صلح کے بعد ڈاکٹرز کی ہڑتال ختم

کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل سے صلح کے بعد ڈاکٹرز کی ہڑتال ...

  



ملتان (وقا ئع نگار)ملتان چوہدری پرویز الہی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے ڈاکٹرز کا ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل سے جھگڑے کا پر، ڈاکٹرز کا دوسرے روز بھی احتجاج کیا،کمشنر ملتان کی ہدایت پر اے ڈی سی جی کی دیگر انتظامی افسران کے ہمراہ کارڈیالوجی ہسپتال آمد،مفاد عامہ میں ڈاکٹرز سے معافی مانگ کر صلح کر لی،پی ایم اے ملتان کی جانب سے ستائش،تفصیل کے مطابق دو روز قبل اے ڈی سی(بقیہ نمبر57صفحہ12پر)

جی جنرل ملتان قمر زمان قیصرانی سے جھگڑے کے بعد ڈاکٹرز نے ہسپتال کے ان ڈور آوٹ ڈور کیتھ لیب اور آپریشن تھیٹر میں ہڑتال کر دی اور احتجاج بھی کیا تھا جبکہ گزشتہ سے پیوستہ رات صوبائی وزیر انرجی ڈاکٹر اختر ملک کارڈیالوجی ہسپتال گئے اور اے ڈی سی جی کی جانب سے واقعہ پر معذرت کروانے کی یقین دہانی کروائی تاہم گزشتہ روز دن گیارہ بجے تک کوئی مثبت پیش رفت نہ ہونے پر ڈاکٹرز نے ایک بار پھر شعبہ ایمرجنسی کے باہر احتجاج شروع کر دیا،تاہم دن بارہ بجے صوبائی وزیر ڈاکٹر اختر ملک کے ہمراہ اے ڈی سی آغا ظہیر عباس شیرازی اور دیگر انتظامی افسران کے ہمراہ کارڈیالوجی پہنچے اور پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر پروفیسر ڈاکٹر مسعود الروف ہراج سمیت دیگر ڈاکٹرز سے مذاکرات کئے بعدازاں کارڈیالوجی ہسپتال کے آڈیٹوریم میں ڈاکٹرز نرسز اور پیرا میڈیکس کی بڑی تعداد کی موجودگی میں اے ڈی سی جی جنرل قمر زمان قیصرانی نے واقعے پر معذرت کی جس پر ڈاکٹرز کی جانب سے بھی ستائش کا اظہار کیا گیا،اور اس موقع پر ڈاکٹرز نے فوری طور پر ہڑتال ختم کر دی،دوسری جانب پی ایم اے کے تمام عہدیدران ڈاکٹر رانا خاور،ڈاکٹر مرتضی بلوچ،ڈاکٹر شیخ عبدالخالق،خالق سناواں،مومن رشید،ڈاکٹر ذوالقرنین،وقار نیازی اور دیگر نے صدر پروفیسر مسعود الروف ہراج کی موجودگی میں کہا کہ ڈاکٹرز کے تمام مسائل کے لئے پی ایم اے ہمیشہ آواز بلند کرتی رہے گی۔چوہدری پرویز الہی انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے ایم ایس ڈاکٹر فہیم لابر نے گزشتہ روز پریس کانفرنس کرتے ہوئے صحافیوں کو بتایا کہ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل قمر زمان قیصرانی اور ڈاکٹرز کے درمیان تنازع حل ہوگیا ہے۔احتجاج ختم کرکے ڈاکٹروں نے ڈیوٹی دینا شروع کردی ہے۔انہوں نے بتایا کہ کمشنر ملتان کے مشکور ہیں انکی زاتی کاوشوں سے مسلہ حل ہوا ہے۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل کے بھی شکر گزار ہیں کے وہ تین بار معاملہ کو حل کرانے کے لیے آئے۔اس لیے صلح ہونے پر معاملہ ختم کردیا گیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر