عمران خان 22 کروڑ عوام کے منتخب کردہ وزیر اعظم ہیں،قربان فاطمہ

عمران خان 22 کروڑ عوام کے منتخب کردہ وزیر اعظم ہیں،قربان فاطمہ

  



بنوں (بیورورپورٹ)پاکستان تحریک انصاف کی مرکزی رہنما قربان فاطمہ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان پاکستان کے22کروڑ عوام کے منتخب کردہ وزیر اعظم ہیں اور ان سے استعفے کا مطالبہ دیوانے کا خواب ہے ایک منتخب وزیر اعظم کا استعفیٰ مانگنا ببول کے درخت سے آم مانگنے کے مترادف ہے وزیر اعظم کو گھر بھیجنا اور ان کا استعفیٰ لینا کوئی خالہ جی کا گھر نہیں اپوزیشن جماعتیں ملک بچانے کیلئے نہیں بلکہ اپنی کرپشن بچانے کیلئے ملک کو داؤ پر لگارہی ہیں یہ لوگ آزادی مارچ کی آڑ میں جیلوں سے آزادی چاہتے ہیں لیکن عمران خان کسی صورت انہیں این آر او نہیں دیں گیاپوزیشن جماعتیں نئے انتخابات کیلئے چار سال انتظار کریں کیونکہ عمران خان کو وزیر اعظم عوام نے بنایا ہے اپوزیشن جماعتوں نے نہیں بنایا کہ انکے مطالبے پر عمران خان استعفیٰ دیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی ٹی آئی کارکنوں کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان کو ایسا لیڈر ملا ہے جنہوں نے عالمی سطح پر اسلام کا صحیح تشخص اجاگر کیا اور پاکستان کے ماتھے پر لگا دہشت گردی کا لیبل ہٹادیا جبکہ مقبوضہ کشمیر کا مقدمہ بھی ہر فورم پر دلیری سے اٹھایا اور عالمی دنیا نے بھارت کے مؤقف کو مسترد کرتے ہوئے کشمیر کو متنازعہ علاقہ قراردیا اور انشاء اللہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت میں ہی کشمیر کا مسئلہ حل ہوگا انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفین جان چکے کہ عمران خان نے اپنی قابلیت سے انکی سیاست کو دفن کردیا ہے اور ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کیلئے روڈ میپ تیار کیا ہے اسلئے اپوزیشن والوں کی چیخیں نکل رہی ہیں اور وہ جانتے ہیں کہ اگر وزیراعظم عمران خان نے پانچ سال پورے کئے تو سیاسی مخالفین کی سیاست ہمیشہ کیلئے ختم ہجائیگی اور2023میں بھی تحریک انصاف کی حکومت بنے گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر