حکومت مولانا سمیع الحق شہید کے قاتلوں کوسامنے لائے،حافظ احمد علی

    حکومت مولانا سمیع الحق شہید کے قاتلوں کوسامنے لائے،حافظ احمد علی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)جمعیت علماءاسلام(س) کے مرکزی ڈپٹی جنرل سیکرٹری حافظ احمد علی نے جامعہ مسجد رحمانیہ کشمیر روڈ میں منعقد مولانا سمیع الحق تعزیتی ریفرینس سے خطاب کے دوران کہا کہ آج 2نومبر ہے مولانا کی شہادت کو پورا ایک سال گزر گیا لیکن مولانا کے قاتل آزاد گھوم رہے ہیں آج ہم سب ملکر اس بات کا عہد لیتے ہیں کہ جمعیت علماءاسلام کے کارکن مولانا سمیع الحق کے مشن کو جاری رکھینگے مولانا سمیع الحق شہید ؒ کے خون سے انقلاب آئیگا ،مولانا سمیع الحق نے ہمیشہ ملک کے دفاع کی جنگ لڑی ہے اور امت کو یکجا کرنے کی کوشش کی ہے دفاع پاکستان کونسل بنانے کا مقصد بھی امت کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کیا ۔ان کی دینی ملکی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائےگا ۔حکو مت موالانا کے قاتلوں کو گرفتار کر کے عوام کے سامنے لائے مولاناسمیع الحق بین الاقوامی شخصیت تھے ان کی اسطرح مظلومانہ شہادت اور قاتلوں کا اب تک نا ملنا تمام اداروں اورحکومت کے لئے سوالیہ نشان ہے ۔ اس موقع پرجمعیت علماءاسلام سندھ کے امیر پیر عبدالمنان انورنقشبندی ، حافظ احمد علی ،سیکرٹری اطلاعا ت، مفتی عابد ،جمعیت علما ءاسلام کراچی سرپرست اعلی ٰ پیر لیاقت علی شاہ ، جنرل سیکٹری علامہ مولاناحماد مدنی ، غلام مصطفی فاروقی ،عبدالستار بلوچ ، مفتی ظل الرحمن ،قاری عبدالوہاب انقلابی علامہ احمد علی مدنی ،مولانا اقبال اللہ،حضرت ولی ہزاروی مولناثاقب مولنا فیضان ،شاہد علی خان ،قاری لیا قت رحمانی اور دیگر رہنماﺅں نے تعزیتی ریفرینس میں شرکت کری ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر