کراچی،خاتون معلمہ مبینہ طور پر ہراساں کیے جانے کے خلاف سراپا احتجاج

کراچی،خاتون معلمہ مبینہ طور پر ہراساں کیے جانے کے خلاف سراپا احتجاج

  



کراچی (رپورٹ /اے ایچ خان )محکمہ تعلیم کراچی ویسٹ کے جی بی پی ایس اسکول آصف کالونی سائٹ ٹاو¿ن کے انچارج طارق حسینی کی جانب سے اسکول میں تدریسی فرائض انجام دینے والی خاتون معلمہ (س) کو مبینہ طور پرہراساں اور مغلظات دینے کا معاملہ، اسکول میں تدریسی فرائض انجام دینے والی خاتون معلمہ اپنے ساتھ ہونے والے معاملے پر مذکورہ استاد کے خلاف سراپا احتجاج بن گئی۔ خاتون معلمہ کی جانب سے انکوائری کے دوران دئیے گئے بیان کے مطابق اسکول میں چھ ستمبر کے حوالے سے منعقدہ ایک تقریب میں چند اشعار پڑھنے سے انچارج اسکول طارق حسینی ناراض ہوگئے جس پر میں نے ان سے تقریب کے بعد فوری معافی بھی مانگی لیکن اس کے بعد سر طارق کا رویہ مجھ سے خراب ہوتا گیا اور انہوں نے مجھے ذہنی طور پر پریشان کرنے کے ساتھ مجھے ہراساں کرنا شروع کردیا اورمیرے بارے میں اسکول اسٹاف کو گمراہ کن باتیں پھیلانا شروع کردی۔خاتون معلمہ کی جانب سے اپنے اعلی افسران کو تمام صورت حال سے آگاہ کیا لیکن ابتک محکمہ تعلیم کی جانب سے مذکورہ استاد طارق حسینی کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا گیا ۔ذرائع کے مطابق با اثر استاد کو محکمہ تعلیم سائٹ کے افسران تحفظ فراہم کررہے ہیں مذکورہ افسر کے خلاف کارروائی کے بجائے انکوائری رپورٹ میں بھی اس پر لگے مبینہ الزامات کی شفاف تحقیقات نہیں کی گئی۔ خاتون معلمہ نے اعلی افسران سے مذکورہ انچارج کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر