سندھ ، غیر رجسٹرڈ صحت کے مراکز کو آخری وارننگ جاری کردی گئی

سندھ ، غیر رجسٹرڈ صحت کے مراکز کو آخری وارننگ جاری کردی گئی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن (ایس ایچ سی سی)نے غیر رجسٹرڈ اسپتالوں و کلینکس کو آخری وارننگ نوٹس جاری کرنا شروع کردیئے اور انسپکشن ٹیموں نے صحت کے مراکز کے دورے شروع کردیئے ہیں اور رجسٹریشن نہ کروانے والے کلینکس کو موقع پر ہی جرمانہ کیا جائے گا۔ ایس ایچ سی سی رجسٹریشن کی سہولت صوبے بھر میں مفت میں کررہا ہے اور مستقبل میں غیر رجسٹرڈ اسپتالوں وکلینکس پر جرمانے کی رقم بپانچ لاکھ روپے ہے ۔دوسری جانب ڈائریکٹوریٹ آف کلینکل گورننس اینڈ ٹریننگ نے پتھالوجسٹس اور معاشی ماہرین سے ملاقات کی اور تشخیصی لیبارٹریز میں سروس چارجز کے تعین کیلئے بات چیت کی۔ میٹنگ میں لیبارٹریز چارجز اور دیگر مختلف امور زیر بحث آئے۔ جبکہ ٹیم نے لیبارٹریز کے معیارات کے حوالے ٹاسک فورس کے اجلاس میں بھی شرکت کی اور معاشی اور ہیومن ریسورس کے معاملا ت پر تفصیل سے بات چیت ہوئی۔ ڈائریکٹوریٹ آف کلینکل گورننس اینڈ ٹریننگ کی ٹیم نے متعدی امراض کے کنٹرول اور بچا کیلئے اسٹیک ہولڈرز میٹنگ میں شرکت کی جس میں پالیسی ڈرافٹنگ کی تیاری کے امور اور ان پر عملدرآمد جیسے امور زیر بحث آئے۔ ڈائریکٹوریٹ نے صوبائی ویسٹ مینجمنٹ کی موجودہ صورتحال اور جاری کاموں کی مفصل رپورٹ وزارت ماحولیات کو بھیج دی ہیں۔ انسداد اتائیت ڈائریکٹوریٹ کے تحت مختلف اضلاع میں اتائیوں کے کارروائیاں جاری ہیں اور اب تک 2585 کلینکس کو سندھ بھر میں سیل کیا جاچکا ہے، جبکہ 674مراکز کو وارننگ نوٹسز جاری کئے جاچکے ہیں۔ انسداد شکایات اسپتالوں سے متعلق مریضوں کی 100شکایات وصول ہوئی ہیں جس میں سے 80کو حل کیا جاچکا ہے جبکہ 14دیگر مختلف مراحل میں ہیں اور چھ قانونی طریقے سے حل کی جارہی ہیں۔ مزید براں ڈائریکٹوریٹ آف لائسنسنگ اینڈ ایکریڈیشن کو 42مزید اسپتالوں نے گذشتہ ایک ہفتے کے دوران رجسٹریشن کیلئے درخواستیں جمع کروائیں اور اب تک 9606 درخواستیں وصول ہوچکی ہیں۔ جبکہ 196مزید صحت کے مراکز کو رجسٹریشن سرٹیفیکٹس کا اجرا کیا گیا اور سندھ بھر میں 8592اسپتال و کلینکس رجسٹرڈ ہوچکے ہیں۔ ایس ایچ سی سی کی ٹیم نے امجد اسپتال کراچی کا معائنہ بھی کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر