سینئر صحافی سلیم صافی آزادی مارچ کے کنٹینر پر گئے تو انہیں خطاب کی دعوت دی گئی لیکن انہوں نے کیا جواب دیا ؟ پنڈال سے بڑی خبر آ گئی

سینئر صحافی سلیم صافی آزادی مارچ کے کنٹینر پر گئے تو انہیں خطاب کی دعوت دی ...
سینئر صحافی سلیم صافی آزادی مارچ کے کنٹینر پر گئے تو انہیں خطاب کی دعوت دی گئی لیکن انہوں نے کیا جواب دیا ؟ پنڈال سے بڑی خبر آ گئی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )مولانا فضل الرحمان کا آزادی مارچ زور شور سے کیمپ لگائے اسلام آباد میں پڑاﺅ ڈال چکا ہے اور انہوں نے اپنے مطالبات بھی حکومت کے سامنے رکھ دیئے ہیں جس کے بعد مذاکراتی کمیٹی بھی حرکت میں آ گئی ہے تاہم آزادی مارچ اب حامد میر کے بعد سلیم صافی بھی پہنچ گئے ۔

تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائر ل ہو رہی ہے جس میں کارکنان کا جوش جذبہ عروج پر دکھائی دیتاہے اور سٹیج پر رہنماﺅں کا رش لگا ہواہے ، اسی دوران سٹیج سے ایک اعلان کیا جاتاہے جس میں سینئر صحافی سلیم صافی کو آزادی مارچ کے کنٹینر پر آنے پر خوش آمدید کہا گیا اور ساتھ ہی انہیں خطاب کی دعوت دی گئی لیکن سلیم صافی مائیک پر آئے اور صرف اتنا ہی کہا کہ ”میں صرف صحافی ہوں اور صحافی کا یہ کام نہیں ہے بلکہ میں یہاں پر آ پ کی کوریج کیلئے آیاہوں اور ساتھ آپ کے جذبے کو بھی دیکھنے کیلئے آیا ہوں ۔ “

سلیم صافی اتنا جملہ کہہ کر واپس چلے جاتے ہیں جس پر میزبان ایک مرتبہ پھر سے سلیم صافی کا کوریج کیلئے آنے پر شکریہ ادا کرتے ہیں ۔یاد رہے کہ اس سے قبل خواتین کو آزادی مارچ کی کوریج کی اجازت دینے پر حامد میر نے مارچ کا دورہ کیا اور اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے جے یوآئی ایف اور ان کے کارکنان کا شکریہ اداکیا ۔

مزید : قومی