شہریوں کے تنازعات ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے کوشاں،پولیس حکام 

   شہریوں کے تنازعات ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے کوشاں،پولیس حکام 

  

پشاور(کرائم رپورٹر)پشاور پولیس شہریوں کے مابین جاری تنازعات کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی خاطر کوشاں ہے، اس ضمن میں پولیس کی جانب سے راضی ناموں کا سلسلہ شروع کرنے سمیت تھانوں میں شہریوں کے مابین صلح اور جرگے بھی کرائے جا رہے ہیں،اسی طرح پولیس کی جانب سے مختلف تھانوں میں ڈی آر سی کونسلز بھی قائم کئے گئے ہیں تاکہ شہریوں کے مابین تمام تصفیہ طلب مسائل کو بروقت اور پرامن طور پر حل کیا جا سکیکیپٹل سٹی پولیس پشاور کی جانب سے قائم ڈی آر سی کونسلز میں گزشتہ ماہ کے دوران شہریوں کے مابین 30 تنازعات کو حل کرا لیا گیا ہے، حل کئے گئے تنازعات میں روز مرہ کے مسائل سمیت جائیداد تنازعات، کاروباری لین دین اور گھریلو جھگڑے حل کئے گئے ہیں خیبر پختونخواہ پولیس کے انقلابی اقدام کا مقصد شہریوں کے مسائل کوان کی دہلیز پر حل کرنا مقصود تھا جس کی خاطر خطہ کے قدیم روایات اور جرگہ سسٹم کو مد نظر رکھتے ہوئے ڈی آر سی کونسلز قائم کئے گئے ہیں جہاں غیر جانبدار اور معزز ممبران کو اہم ذمہ داریاں تفویذ کی گئی ہیں جو شہریوں کے مابین تصفیہ طلب مسائل کو کامیابی کے ساتھ فریقین کی باہمی رضا مندی کے ساتھ حل کر رہے ہیں  سی سی پی او عباس احسن نے پولیس کی جانب سے جاری جرگہ مہم، تھانوں کی سطح پر راضی نامہ کرانے کے ساتھ ساتھ ڈی آر سی کونسلز کی کارکردگی پر بھی اطمینان کا اظہار کیا ہے، انہوں نے کہا ہے کہ شہریوں کی بڑی کا تعداد کا ڈی آر سی کونلسلز سے رابطہ کرنا ڈی آر سی کونسلز کی کامیابی کا منہ بولتا ثبوت ہے جہاں ڈی آر سی ممبران اپنے منشور پر قائم رہتے ہوئے انصاف کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے شہریوں کے مابین صلح صفائی کرارہے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -