میو ہسپتال میں 80کروڑ روپے کی کرپشن، 12افراد کے خلاف مقدمہ درج 

میو ہسپتال میں 80کروڑ روپے کی کرپشن، 12افراد کے خلاف مقدمہ درج 

  

لاہور(اپنے نمائندہ سے)میو ہسپتال میں کروڑوں  روپے کی کرپشن پر اینٹی کرپشن نے  مقدمہ درج کر لیا۔محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب نے میو ہسپتال کے پپیپراا رولز کی خلاف ورزی کرکے سرکاری خزانے کو 80کروڑ روپے کا نقصان پہنچنے کی کوشش کرنے والے12افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔ کرپشن کے میگا سکینڈل میں ایک پروفیسر سمیت 12 ڈاکٹرز بشمول پروفیسر ڈاکٹر احمد عزیر قریشی،ڈپٹی ڈائریکٹر ڈرگ شیخ الطاف فارمسسٹ عتیق منور، خالد محمود سمیت دیگر کے خلاف مقدمہ درج کرلیاگیاہے۔اینٹی کرپشن ذرائع کے مطابق میو ہسپتال کے پروکیورمنٹ ٹینڈر برائے سرجیکل اینڈ ڈسپوزل اشیا ء کی خریداری کا ٹھیکہ سابق سٹور کیپر شکیل کے ایما پر چار کمپنیوں کو غیر قانونی طور پر دیا گیا ہے جبکہ61کمپنیوں کی درخواستوں میں سے 41 کو تکنیکی بنیادوں پر خارج کرکے چار کمپنیوں کو سپلائی کا آرڈر جاری کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق2022-23ء  میں 1 ارب35 کروڑ سے سرجیکل،ڈسپوزبل اور میڈیکل کی 2000 آئٹمز خریدی جانی تھی،میو ہسپتال انتظامیہ نے 10 کروڑ کی خطیر رقم سے محض 21 آئٹمز خریدیں،خریدی گئی اشیا مارکیٹ ریٹ سے سو فیصد مہنگی خریدیں گئیں۔اینٹی کرپشن نے چھاپہ مار کر مزید 80 کروڑ کی پیمنٹ ہونے سے روک دی ہے۔

میو ہسپتال سکینڈل

مزید :

صفحہ آخر -