ماڈل ٹاؤن کانسٹیبل کی ہلاکت، مقدمہ کا فیصلہ کل سنائے جانیکا امکان

ماڈل ٹاؤن کانسٹیبل کی ہلاکت، مقدمہ کا فیصلہ کل سنائے جانیکا امکان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
لاہور(نامہ نگار)انسداددہشت گردی کی عدالت کے جج اعجازاحمد بٹرنے ماڈل ٹاؤن میں کانسٹیبل کمال احمد کے قتل میں ملوث ملزمان کی رہائی سے متعلق اپنافیصلہ محفوظ کر لیاہے،تحریک انصاف کے لانگ مارچ میں سرچ آپریشن کے دوران کانسٹیبل کی ہلاکت کے مقدمہ کا فیصلہ کل4نومبر کو سنائے جانے کا امکان ہے،ملزمان کی جانب سے فرہاد علی شاہ ایڈووکیٹ نے دلائل دئیے،دوران سماعت ملزم کا والد ساجد حسین بخاری حاضری کے لئے عدالت میں پیش ہوا،تفتیشی رپورٹ کے مطابق باپ بیٹا ملزمان تحریک انصاف کے کارکنان ہیں،ملزمان نے پولیس سرچ آپریشن کے دوران کانسٹیبل کمال احمد کو گولی مار کر شہید کر دیا تھا،عدالت نے مقدمے میں پندرہ گواہوں کے بیانات ریکارڈ کئے گئے ہیں،ملزمان کے دفعہ 342 کے آخری بیان صفائی ریکارڈ ہو چکے ہیں،عدالت نے پراسیکیوشن اور ملزمان وکلاء کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیاہے۔
 کانسٹیبل کی ہلاکت

مزید :

صفحہ آخر -