لاہور ہائیکورٹ، لانگ مارچ کیلئے گاڑیوں کی پکڑ دھکڑ،درخواست واپس

لاہور ہائیکورٹ، لانگ مارچ کیلئے گاڑیوں کی پکڑ دھکڑ،درخواست واپس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


  ملتان(خصو صی  رپورٹر)لاہور ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج مسٹر(بقیہ نمبر12صفحہ6پر)
 جسٹس راحیل کامران نے انتظامیہ کی جانب سے پی ٹی آئی کے لانگ مارچ کے لئے ٹرانسپورٹرز کی گاڑیاں پکڑنے کے خلاف درخواست سیکرٹری آر ٹی اے کے بیان پر نمٹادی ہے۔ اس موقع پر سیکرٹری آر ٹی اے نے موقف اختیار کیا کہ ہم نے کوئی گاڑی تحویل میں نہیں لی اور آئندہ بھی کوئی گاڑی نہ پکڑنے کی یقین دہانی کرائی جس پر درخواست واپس لینے پر خارج کردی گئی۔ پیٹشنر نے کمشنر ملتان ڈویژن، ڈپٹی کمشنر ملتان، سیکرٹری ٹرانسپورٹ ملتان کا فریق بنایا تھا۔ قبل ازیں عدالت عالیہ میں شجاع آباد ویگن اسٹینڈ کے پراپرئیٹر محمد فرید نے کونسل محمد بلال بٹ کے ذریعے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے پی ٹی آئی کے لانگ مارچ کے لئے ٹرانسپورٹرز کی گاڑیاں پکڑی جا رہی ہیں۔پنجاب حکومت کے ایما پر ٹرانسپورٹرز کی ویگنیں اور بسیں پکڑی جا رہی ہیں۔ آئین کے آرٹیکل 4 کے تحت ہر شہری کو آزاد کاروبار کی اجازت ہے۔ انتظامیہ یا حکومت کسی کے کاروبار میں مداخلت نہیں کر سکتی۔ پکڑی جانے والی تمام گاڑیاں فوری طور پر چھوڑی جائیں