تین بچوں کا قتل، ملزموں کیخلاف گرینڈ سرچ آپریشن

تین بچوں کا قتل، ملزموں کیخلاف گرینڈ سرچ آپریشن

  

کوٹ ادو(نامہ نگار)ریجنل پولیس آفیسر ڈی جی خان سید خرم علی نے ضلع کوٹ ادو کا دورہ کیا.ایس ڈی پی او آفس کوٹ ادو پہنچیپرڈی پی او کوٹ ادو احمد نواز نے آر پی او کا پرتپاک استقبال کیا۔آر پی او سید خرم علی کی زیر صدارت ایس ڈی پی او آفس کوٹ ادو  میں میٹنگ کا انعقاد ہوا۔میٹنگ میں ڈی پی او کوٹ ادو،ایس پی آر آئی بی سمیت دوران ڈکیتی تین افراد کے قتل کیکیس کی سپیشل انوسٹی گیشن ٹیم کے افسران نے شرکت کی۔ آر پی او نے ضلع بھر کی کرائم کی (بقیہ نمبر30صفحہ7پر)

مجموعی صورتحال اور  تین افراد کے قتل کیکیس کی تفتیش میں اب تک ہونے  والی پیش رفت کا جائزہ لیا۔ڈی پی او کوٹ ادو  نے تین افراد کے قتل کیس کی تفتیش اور مجرمان کی گرفتاری کیلیے پولیس کی جانب سے کیئے گئے اقدامات اور آئیندہ کی حکمت عملی سے متعلق  بریف کیا۔ آر پی او نے کیس کی تفتیش کا تفصیلی جائزہ لیکرمجرمان کی گرفتاری کے لیے کی جانے والے کوششوں کو مزید تیز کرنے اور روائیتی طریقہ کار کے ساتھ ساتھ جدید سائنسی طریقہ کار کو بروئے کارلاکر مجرمان کی جلد سے جلد گرفتاری کو  یقینی بنانے کے احکامات جاری کیئے۔آر پی او کا کہنا تھاکہ مظلوم کو انصاف کی فراہمی میں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔ آر پی او نے میٹنگ کے دوران ضلع مظفر گڑھ اور ضلع کوٹ ادو میں جرائم پیشہ افراد کے خلاف جاری گرینڈ سرچ آپریشن  اور اس کے نتیجے میں حاصل کامیابیوں کا جائزہ بھی لیا۔اس وقت  آر پی او ڈی جی خان سید خرم علی کے احکامات کی روشنی میں ضلع مظفر گڑھ اور کوٹ ادو  میں جرائم  پیشہ افراد کی سرکوبی کیلیے  گرینڈ سرچ آپریشن کا سلسلہ جاری ہے ۔ان سرچ  آپریشنز میں پنجاب پولیس،ایلیٹ فورس،سپیشل برانچ کی ٹیمیں بھی حصہ لے رہی ہیں۔سر چ آپریشن کے دوران مشکوک افراد کی بائیومیٹرک تصدیق سے درجنوں اشتہاری مجرمان اور مختلف مقدمات میں مطلوب مجرمان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے اور اسلحہ ناجائز و منشیات  برآمد کرکے متعدد مقدمات درج کیئے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ شہروں کے داخلی خارجی راستوں اور دریائے سندھ کے پتن کے مقامات پر پولیس پکٹس  کا باقاعدہ آغاز کرکے چیکنگ کا سلسلہ جاری ہے۔اس موقع پر آر پی او کا کہنا تھا کہ  کوٹ ادومیں تین معصوم افراد کے قتل میں ملوث مجرمان کوبہت جلد قانون کی گرفت میں لاکر کیس کو منتقی انجام تک پہنچائیں گے. معاشرے کا امن تباہ رکرنے والے  قانون شکن عناصر سے آہنی ہاتھوں سے نمٹاجائے گا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -