غیر قانونی لائسنس اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس ،نیب لاہور کا عثمان بزدار کوگرفتار کرنے کا فیصلہ

غیر قانونی لائسنس اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس ،نیب لاہور کا عثمان بزدار ...
غیر قانونی لائسنس اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس ،نیب لاہور کا عثمان بزدار کوگرفتار کرنے کا فیصلہ

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی احتساب بیورو(نیب )لاہور نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو غیر قانونی لائسنس اور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتار کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

نجی ٹی وی چینل ہم نیوز کے مطابق ذرائع نیب کاکہناہے کہ نیب ہیڈ کوارٹر نے نیب لاہور کو 15 دن کا وقت دے دیا، نیب ہیڈکوارٹر نے ہدایت کی ہے کہ عثمان بزدار کی گرفتاری سے متعلق مواد جلد مکمل کیا جائے،ذرائع کے مطابق نیب انویسٹی گیشن ٹیم نے بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ عثمان بزدار کیخلاف ابھی ایسے شواہد نہیں ملے کہ گرفتار کیا جاسکے، ذرائع کاکہنا ہے کہ نیب ہیڈکوارٹر نے ہدایت کی ہے کہ 15 دن میں شواہد حاصل کر کے گرفتاری یقینی بنائی جائے۔

نیب لاہور نے ایل ڈی اے سمیت دیگر سوسائٹیز کو مراسلے لکھ رکھے ہیں،عثمان بزدار کے نام پر موجود پر اپرٹی کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں، 

نیب لاہور کاکہناہے کہ عثمان بزدار کیخلاف آمدن سے زائد اثاثوں کی بھی تحقیقات شروع ہیں،ایل ڈی اے کو 17 اکتوبر کو مراسلہ لکھ کر تفصیلات مانگی ہیں،نیب لاہور کا مزید کہنا ہے کہ عثمان بزدار پر نجی ہوٹل کو غیر قانونی لائسنس دینے میں اثرو رسوخ استعمال کرنے کا بھی الزام ہے۔

عثمان بزدار کے وکیل اظہرصدیق نے کہاکہ عثمان بزدار کیخلاف سیاسی بنیادوں پر مقدمات بنائے جا رہے ہیں، نیب کی غیر قانونی اقدامات کیخلاف جلد ہائی کورٹ سے رجوع کریں گے۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -