ہندو انتہا پسند لیڈر نے خاتون صحافی سے بات کرنے سے انکار کردیا، وجہ ایسی کہ کوئی سوچ بھی نہ سکے

ہندو انتہا پسند لیڈر نے خاتون صحافی سے بات کرنے سے انکار کردیا، وجہ ایسی کہ ...
ہندو انتہا پسند لیڈر نے خاتون صحافی سے بات کرنے سے انکار کردیا، وجہ ایسی کہ کوئی سوچ بھی نہ سکے

  

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے ہندوانتہاءپسند لیڈر سمبھا جی بھیڈے نے ایک خاتون صحافی سے بات کرنے سے انکار کر دیا کیونکہ اس نے ماتھے پر ’بِندی‘ نہیں لگا رکھی تھی۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق سمبھا جی بھیڈے ریاست مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ ایکناتھ شندے کے ساتھ ساﺅتھ ممبئی میں واقع سٹیٹ سیکرٹریٹ میں ملاقات کرکے باہر نکلے تھے جہاں خاتون صحافی نے ان سے بات کرنے کی کوشش کی۔

سمبھا بھیڈے نے خاتون صحافی سے کہا کہ ”خواتین بھارت ماتا کے سمان ہوتی ہیں اور کسی بھی خاتون کو بغیر بِندی کے نہیں رہنا چاہیے۔ بغیر بِندی کے خاتون بیوہ لگتی ہے۔ اگر آپ مجھ سے بات کرنا چاہتی ہیں تو پہلے بِندی لگا کر آئیں۔“انتہاءپسند ہندولیڈر کے اس بیان پر مبنی ویڈیو کلپ انٹرنیٹ پر وائرل ہونے پر مہاراشٹر کے مہیلا کمیشن کی چیئرپرسن روپالی چکنکر کی طرف سے وضاحت کے لیے سمبھا جی کو نوٹس جاری کر دیا گیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -