پاکستان اور ترکی کو قریب تر لانے کا وزیراعلیٰ شہباز شریف کا ویژن (1)

پاکستان اور ترکی کو قریب تر لانے کا وزیراعلیٰ شہباز شریف کا ویژن (1)
پاکستان اور ترکی کو قریب تر لانے کا وزیراعلیٰ شہباز شریف کا ویژن (1)

  

ملکوں کے درمیان تعلقات سے فائدہ اُٹھا نا ایک ایسا کام ہے جسے کوئی صاحب ِبصیرت رہنما ہی سرانجام دے سکتا ہے۔بھارت کے ساتھ پاکستان کے تعلقات طویل عرصے تک کشیدگی کا شکار رہے،جنگیں ہوئیں،محاذ آرائیاں ہوئیں، لیکن دونوں ملکوں کے عوام کی بہتری کا سوچنے کا کسی کو خیال نہ آیا۔ بالآخر جب محمد نواز شریف وزیراعظم پاکستان بنے تو اُنہوں نے روایتی سوچ بدلنے یا سٹیٹس کو کو توڑنے کا عزم کیا،یوں دیکھتے ہی دیکھتے ایٹمی دھماکوں کا جواب ایٹمی دھماکوں سے دینے والے ملک اتنا قریب آگئے کہ اختلافات کی تمام دیواریں ایک ایک کرکے گرتی چلی گئیں۔یہ معاملہ برادر اسلامی ملک ترکی کے معاملے میں نظر آیا۔وہ ملک جو ہر مشکل وقت میں پاکستانی عوام کی مدد کو پہنچتا رہا،اُس کے ساتھ دوستانہ تعلقات کو محض بیان بازی تک محدود رکھا گیا۔کسی پاکستانی حکومت نے کبھی یہ نہیں سوچا کہ وہ ملک جو طویل عرصے تک اندرونی خلفشار کا شکار رہنے کے بعد اب دُنیا کی سب سے بڑی اقتصادی طاقت بن چکا ہے،اس کی مہارت اور تجربے سے فائدہ اُٹھایا جائے۔ آج اقتدار کے وفاقی ایوانوں پر متمکن حکمرانوں نے ملک اور قوم کو مسائل اور بحرانوں کے تحفے دینے میں تو کوئی کسر اُٹھا نہیں رکھی، لیکن عوام کی بہتری کی طرف دھیان دینے کی اُنہیں بالکل فرصت نہیں۔

اِن حالات میں پنجاب میں مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے کئی ممالک کے ساتھ رابطوں میں براہ راست اضافے کا فیصلہ کیا جس کے تحت کئی ملکوں سے صوبے کی ترقی اور یہاں سرمایہ کاری کے لئے معاہدے کئے گئے۔بات تو نیت کی ہوتی ہے،جب کسی رہنما کی نیت صاف ہو اور وہ حقیقی معنوں میں عوام کی خدمت کرنا چاہتاہو تو تمام رکاوٹیں دُور ہوتی چلی جاتی ہیں۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف بھی ایک ایسے صاحب ِبصیرت لیڈر ہیں ،جو عوام کو ریلیف دینے کا عہد کئے ہوئے ہیں۔اُنہوں نے ترکی کے ساتھ تعلقات کومعاشی رابطوں میں تبدیل کرنے اور دونوں ملکوں کے عوام کو مزید قریب لانے کا بیڑا اُٹھایا۔الحمد ﷲ آج ترکی کی حکومت اور عوام میں پاکستان اور پاکستانی عوام کی قدر ومنزلت پہلے سے کہیں بڑھ چکی ہے۔شروع شروع میں وزیراعلیٰ کے اقدامات پر تنقید کرنے والے عناصر بھی آج برملا اُن کی پالیسیوں کی تعریف کرنے پر مجبور ہوچکے ہیں۔پاک ترک دوستی وقت گزرنے کے ساتھ مضبوط سے مضبوط تر ہورہی ہے۔دونوں ملکوں کے درمیان دوستی اور اشتراک کار کے نئے باب رقم ہورہے ہیں۔ترکی کی بے مثال اور تیز رفتار ترقی پاکستان سمیت دُنیا بھر کے لئے رول ماڈل بن چکی ہے اور پاکستان خصوصاً پنجاب حکومت ترکی کی ترقی سے استفادہ کرکے عوام کی فلاح وبہبود کے لئے اقدامات کررہی ہے۔پنجاب حکومت غیر ملکی سرمایہ کاروں کو خصوصی مراعات اور سہولتےں فراہم کررہی ہے اور ترک سرمایہ کار پنجاب میں توانائی، ٹرانسپورٹ ،تعمیرا ت اور دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کے شاندار مواقع سے فائدہ اُٹھا سکتے ہیں۔

 وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف26ستمبر کو اپنے وفد کے ساتھ ترکی کے سرکاری دورے پر روانہ ہوئے۔ لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیر پورٹ پر میڈیا سے گفتگو میں اُنہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت عوامی مینڈیٹ سے محروم ہوچکی ہے، لہٰذا فوری انتخابات وقت کی اہم ضرورت ہیں۔کرپٹ اور نااہل حکمرانوں نے قومی ادارو ں کو تباہی کے دہانے پر لاکھڑ ا کیا ہے،حکومت کی طرف سے آئین اور قانون کا مذاق اُڑایا جارہا ہے اور عدالتی فیصلوں کی سرعام تضحیک کی جارہی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ترکی ہمارا برادر اسلامی ملک ہے اور حالیہ برسوں کے دوران دونوں ملکوں کے مابین تعاون میں گراں قدر اضافہ ہوا ہے۔مسلم لیگ(ن) کی پنجاب حکومت کی کوششوں سے ترکی کے ساتھ دو طرفہ تعلقات میں نمایاں بہتری آئی ہے۔ترکی حکومت اور ادارے پنجاب میں ٹرانسپورٹ اور سالڈ ویسٹ مینجمنٹ سمیت مختلف منصوبوں پر کام کررہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ پنجاب میں میٹرو بس پراجیکٹ شروع کرنے کا مقصد عوام کو عالمی معیار کی سفری سہولتےں مہیا کرنا ہیں اور ترکی میں میٹروپراجیکٹ کے لئے جدید بسوں کی خریداری کے معاہدے پر دستخط ہوگئے۔

 محمدشہباز شریف جب استنبول (ترکی) پہنچے تو وہاں سفارت کاروں،اعلیٰ حکام ،پاکستانیوں اور ترک شہریوں کی بڑی تعداد نے اُن کا شاندار استقبال کیا۔اِس موقع پر وزیرا علیٰ نے کہا کہ ترکی اور پاکستان اسلامی بھائی چارے کے تاریخی اور لازوال بندھن میں بندھے ہوئے ہیں اور ترکی میں حالیہ چند عشروں میں ہونے والی ترقی کو رول ماڈل کی حیثیت حاصل ہے۔ترکی کے شہر استنبول میں ترک کمپنی”البراک“ نے وزیراعلیٰ کے اعزاز میں استقبالیہ تقریب کا اہتمام کیا۔تقریب سے خطاب میں محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ ترکی نے گذشتہ عشروں میں بے مثال ترقی کی ہے اور دُنیا کی16ویں بڑی معاشی قوت کے طور پر اُبھر کر سامنے آیا ہے۔ترکی کی معاشی اور ٹیکنالوجی کے میدان میں ترقی سے ہمیں بہت کچھ سیکھنے کی ضرورت ہے۔ حکومتوں کی سطح پر سنجیدہ اقدامات کے ذریعے برادرانہ تعلقات کو فائدہ مند معاشی رابطوں میں تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ترک کمپنیاں ”البراک“ اور” ازباک“ لاہور سمیت پنجاب بھر میں600ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کررہی ہیں اور صفائی ستھرائی کے حوالے سے ایک نیا روپ اختیار کرنے والی لاہور کی سٹرکیں اِن کمپنیوں کی اَن تھک محنت کی گوا ہ ہیں۔ لاہور کو استنبول کی طرز پر صاف ستھرا بنانے کے لئے ”البراک“ کمپنی کی کوششیں قابل تعریف ہیں۔

”البراک“کے ساتھ معاہدہ محض تجارتی نہیں بلکہ دو بھائیوں کے درمیان تعاون کا معاہدہ ہے جو پاکستان اور ترکی کے مابین دوستانہ تعلقات میں سنگ میل ثابت ہوگا۔ صفائی کے اِس ماڈل کو صوبے کے دوسرے شہروں تک بھی لے کر جائیں گے۔27 ستمبر کو وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے ترکی کے صوبے وین کا دورہ کیا اور وہاں ایک ملین ڈالر کی لاگت سے زلزلہ متاثرین 256بچوں کے لئے ہاسٹل کا سنگ بنیاد رکھا۔وہ جب وین سٹی پہنچے تو گورنر صوبہ وین مسٹر منیر کروگلو اور شہریوں کی بڑی تعداد نے اُن کا والہانہ استقبال کیا۔وزیراعلیٰ نے ترکی کے صوبہ وین کے گورنر منیر کاروگلو سے ملاقات میں پنجاب اور ترکی کے درمیان مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے فروغ کے حوالے سے بات چیت کی۔وزیراعلیٰ پنجاب نے وین سٹی میں لوگوں کے بڑے اجتماع سے خطاب کیا۔وزیراعلیٰ محمد شہبا شریف اور اُن کے وفد نے ترکی کے گاﺅں پیرگھا رب کا دورہ کیا۔گاﺅں کے لوگوں نے وزیراعلیٰ پنجاب اور اُن کے وفد کا روایتی رقص کے ساتھ اور پلے کارڈ اُٹھا کر پُرجوش استقبال کیا۔ وزیراعلیٰ کے دورے کے دوران گاﺅں میں تہوار کا سماں تھا۔وزیراعلیٰ نے ترکی کے دو دیہات کے زلزلہ متاثرین میں امدادی اشیاءکے ایک ہزار پیکٹ بھی تقسیم کئے۔

اِس دورے کی سب سے اہم پیش رفت ترکی کے صدر اور وزیراعظم سے جناب محمد شہباز شریف کی ملاقات کی تھی۔انقرہ میں ترکی کے صدر جناب عبداﷲ گل سے ملاقات میں وزیراعلیٰ نے کہا کہ ترکی اور پاکستان کے عوام دوستی،بھائی چارے اور اُخوت کے لازوال رشتے میں بندھے ہوئے ہیں اور یہ رشتہ ہر آنے والے وقت میں مضبوط سے مضبوط تر ہورہا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ترکی نے ہر مشکل گھڑی میں پاکستان کا بھرپور ساتھ دیا ہے۔زلزلہ ہو یا سیلاب، پاکستانی عوام نے ترک بھائیوں کو اپنے شانہ بشانہ کھڑے پایا ہے،اِسی طرح پاکستانی عوام کے دل بھی اپنے ترک بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں اور بلاشبہ ترکی کی حالیہ عشروں میں بے مثال اور تیز رفتار ترقی پاکستان کے لئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتی ہے۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا کہ پنجاب اور پاکستان کے فلاحی اور ترقیاتی منصوبوں میں ترکی کا تعاون قابل ستائش ہے،خصوصاً پنجاب میں ٹرانسپورٹ اور سالڈ ویسٹ مینجمنٹ کے شعبوں میں ترک کمپنیوں کے تعاون سے انتہائی کامیابی سے منصوبے چل رہے ہیں۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے پاکستان ، خصوصاً پنجاب میں ترقیاتی منصوبوں میں ذاتی دلچسپی لینے اور بے پایاں تعاون پر ترک صدر عبداﷲ گل کا شکریہ ادا کیا۔(جاری ہے)     ٭

ترک صدر نے کہا کہ صوبہ پنجاب کی ترقی اور عوام کی فلاح وبہبود کے لئے وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف کے اقدامات قابل تعریف ہیں اور اُن کی قیادت میں صوبہ پنجاب ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔آج کے ترکی کی ترقی کے معمار وزیراعظم رجب طیب اردگان سے محمد شہباز شریف نے انقرہ میں ڈیڑھ گھنٹہ ون ٹو ون ملاقات کی۔ترک وزیراعظم نے وزیراعلیٰ کا انتہائی گرم جوشی سے استقبال کیا اور اُنہیں خوش آمدید کہتے ہوئے پاکستان کے عوام کے لئے اپنی اور ترکی کے عوام کی جانب سے نیک تمناﺅں اور بھرپور دلی جذبات کا اظہار کیا۔محمد شہباز شریف نے ترک وزیراعظم سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ترک اداروںکا پنجاب میں مختلف شعبوں میں تعاون قابل ستائش ہے اور ہمیں ترکی کی دوستی پر فخر ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ ترک کمپنیوں کے تعاون سے کئی ایک منصوبے تیزی سے مکمل کئے جارہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ گزشتہ سال سیلاب کے دوران ترک حکومت اور عوام کی جانب سے متاثرین کی امداد کو پاکستانی کبھی بھلا نہیں پائیں گے۔جناب طیب اردگان نے وزیراعلیٰ شہباز شریف کو صوبے کی ترقی اور عوا م کی فلاح وبہبود کے لئے کئے گئے اقداما ت پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ترکی عوامی فلاح وبہبود کے منصوبو ں میں اپنا تعاون جاری رکھے گا۔اُنہوں نے وزیراعلیٰ شہباز شریف کے دورہ ترکی کو اہم قدم قرار دیا۔ (جاری ہے)

مزید : کالم