ڈرو،ڈرو،ڈرون آگیا۔۔۔

ڈرو،ڈرو،ڈرون آگیا۔۔۔
ڈرو،ڈرو،ڈرون آگیا۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن (بیورورپورٹ) امریکی جامعات کی ایک تحقیقاتی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ دنیا میں ڈرون ٹیکنالوجی کے پھیلاﺅ کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔ نیویارک یونیورسٹی فار لاءاور پٹنہ فار لاءسکول کی مرتب کی جانیوالی رپورٹ کے مطابق ڈرون بنانے والی کمپنیاں اپنی مصنوعات دنیا بھر میں پھیلا رہی ہیں اور آئندہ دہائی میں عالمی سطح پر ڈرون طیاروں پر چورانوے ارب ڈالرز سے زیادہ رقم خرچ کی جائے گی۔ رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ چین پاکستان، روس ایران اور بھارت سمیت 76 ممالک نے ڈرون ٹیکنالوجی حاصل کر لی ہے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکہ کی جانب سے جس طرح ڈرون ٹیکنالوجی کو استعمال کیا جا رہا ہے اس سے خطرناک مثالیں قائم ہوسکتی ہیں اور دیگر ممالک بھی سرحد پار ڈرون حملوں کا سلسلہ شروع کرسکتے ہیں

مزید : ڈیلی بائیٹس