پاک آسٹریلیا سیریز کے دوران نئی پلیئنگ کنڈیشنز کا اطلاق ہو گا

پاک آسٹریلیا سیریز کے دوران نئی پلیئنگ کنڈیشنز کا اطلاق ہو گا

ز

دبئی (سپوٹس ڈیسک) پاکستان اور آسٹریلیا کی ٹیموں کے درمیان شیڈول ٹی ٹونٹی، ون ڈے اور ٹیسٹ سیریز میں انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی نئی پلیئنگ کنڈیشنز ترامیم کا باضابطہ اطلاق ہو گا۔ پاک آسٹریلیا ٹیموں کے درمیان سیریز کا آغاز 5 اکتوبر کو واحد ٹی ٹونٹی میچ سے ہو گا۔ آئی سی سی کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق آئی سی سی نے پلیئنگ کنڈیشنز میں پانچ نئی ترامیم کی منظوری دے دی ہے جس کا باضابطہ طور پر اطلاق پاک آسٹریلیا سیریز کے دوران ہو گا۔ آئی سی سی ترامیم میں ٹی ٹونٹی اننگز کا دورانیہ 80منٹ سے بڑھا کر 85 منٹ کیا گیا ہے، سال 2014-15ءکیلئے کی گئی نئے قواعدوضوابط کے تحت سنیکو میٹر ٹیکنالوجی کو کھیل کا حصہ بنایا گیا ہے، ڈی آر ایس قانون کو برقرار رکھتے ہوئے 80 اوورز کے بعد ہر ٹیم کو دوبارہ دو ڈی آر ایس مل جائیں گے، نئی پلیئنگ کنڈیشنز کے مطابق معطل شدہ کھلاڑی میچ کے دوران کسی قسم کی نقل و حرکت نہیں کرے گا، فیلڈنگ کے دوران باہر جانے والا کھلاڑی واپسی پر اس وقت تک باﺅلنگ نہیں کرا سکتا جب تک وہ باہر گزارا ہوا وقت پورا نہ کر لے، بیٹنگ کیلئے بھی یہی قانون ہو گا۔ البتہ پانچ وکٹیں گر جانے کی صورت میں وہ فوری طور پر بیٹنگ کر سکتا ہے۔ امپائر کیلئے لازمی قرار دیا گیا ہے کہ وہ کھیل روکنے سے قبل میچ ریفری سے مشاورت کرے، امپائر کو حق حاصل ہے کہ وہ اوس پڑنے یا ایسی کوئی بھی صورت حال جو میچ کو متاثر کرنے یا پھر کھلاڑی کو نقصان پہنچانے کا سبب بنے میچ روک سکتا ہے، تمام کپتانوں کو ٹاس سے قبل پلیئنگ الیون کے ساتھ چار متبادل کھلاڑیوں کے ناموں کی فہرست میچ ریفری کو پیش کرنا ہو گی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...