پاکستانی لیدر انڈسٹری کی بحالی کے لئے 20 لاکھ یورو کا منصوبہ

پاکستانی لیدر انڈسٹری کی بحالی کے لئے 20 لاکھ یورو کا منصوبہ


کراچی (اکنامک رپورٹر)یورپی یونین نے پاکستان میں زبوں حالی کا شکار چمڑے کی صنعت کی بہتری کے لیے بیس لاکھ یورو مالیت کے ایک تین سالہ منصوبے کا آغاز کر دیا ہے۔ جرمن خبر رساں ادارے کے مطابق چمڑے کی پاکستانی صنعت کے لیے مسابقت میں بہتری کا پروگرام نامی یہ منصوبہ یورپی یونین کے تجارت سے متعلق تکنیکی امدادی پروگرام کے تحت شروع کیا گیا ہے۔ اس حوالے سے پاکستانی دارالحکومت اسلام آباد میں منعقدہ ایک تقریب میں یورپی یونین کے نمائندوں ، پاکستانی حکام اور ملکی لیدر اں ڈسٹری سے وابستہ تاجروں نے شرکت کی۔ یورپی یونین کے پاکستان مشن میں تعاون کے شعبے کے سربراہ برنارڈ فرانسوا کا کہنا تھا کہ اس پروگرام کے مقاصد میں پاکستان میں چمڑے کی صنعت میں مقابلے کے رجحان میں بہتری ، عملے کی تربیت ، بین الاقوامی منڈیوں تک رسائی میں اضافہ اور مصنوعات کی تیاری میں تنوع شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کے تحت چمڑے کے لباس ، دستانوں اور جوتوں کی تیاری کے لیے متعلقہ کاروباری حلقوں کی شمولیت پر توجہ دی جائے گی۔ برنارڈ فرانسوا نے ڈی ڈبلیو کو بتایا کہ یورپی ٹیکس دہندگان کی رقوم سے شروع ہونے والے ان منصوبوں میں شفافیت کا خاص خیال رکھا جاتا ہے۔ میں سیالکوٹ اور گجرات جا رہا ہوں اور یہ موقع ہو گا کہ تجارت سے متعلقہ تکنیکی معاونت کے پروگرام کے تحت حاصل کردہ نتائج کو دیکھا جا سکے۔ ہم بہت خوش ہیں کیونکہ ہم اس میں کامیاب رہے ہیں۔ پاکستان میں سرکاری اہلکار بھی اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ پاکستانی چمڑے کی صنعت مسابقت کی موجودہ فضا میں پیچھے رہ گئی ہے۔

مزید : کامرس