امریکی سفیر کالاہور میں نیٹ ورک آپریشنز سنٹر کا افتتاح

امریکی سفیر کالاہور میں نیٹ ورک آپریشنز سنٹر کا افتتاح

لاہور( پ ر)امریکی سفیر رچرڈ اولسن اورسی ای او پاور انفارمیشن کمپنی حسن توقیر بخاری نے واپڈاہاﺅس لاہور کے دفتر میں نیٹ ورک آپریشنز سنٹر کی افتتاحی تقریب کی صدارت کی۔ یہ سنٹر پاکستان کی بجلی کی ڈسٹری بیوشن کمپنیوں اور یو ایس ایڈ کے درمیان ایک شراکت داری کے ذریعے قائم کیا گیا ہے۔ اس کی بدولت ملک بھر میں دستیاب بجلی کی زیادہ مو¿ثر مینجمنٹ اور شیڈول کے بغیر لوڈشیڈنگ گھٹانے کے ذریعے توانائی کا جاری بحران کم کرنے میں مدد ملے گی۔ نیٹ ورک آپریشنز سنٹر مانیٹرنگ اور کنٹرول کے جدید ترین نظاموں کو منظم کرتا ہے جو سرکاری ملکیت میں چلنے والی تمام دس پاور ڈسٹری بیوشن کمپنیوں میں نصب کیے گئے ہیں۔ اس طرح پاکستان کی بجلی مختص کرنے کا عمل زیادہ فعال انداز میں انجام پائے گا۔اولسن نے کہا، ”امریکی حکومت پاکستان کو متعدد حوالوں سے متاثر کرنے والے توانائی بحران کو حل کرنے کے لیے ضروری اقدامات لینے کی خاطر حکومت پاکستان کے ساتھ شراکت عمل کو باعث فخر سمجھتی ہے۔“ انہوں نے مزید کہا، ”ہم مل کر کام کرتے ہوئے ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کو ملک میں بجلی کی سپلائی منظم کرنے اور لوڈ شیڈنگ کے بالکل درست شیڈول بنانے کے ذریعے پاکستانیوں کی روزمرہ زندگی میں معاونت کر رہے ہیں۔“اس وقت شیڈول کے بغیر اور اچانک لوڈ شیڈنگ پاکستان کے توانائی بحران میں سب سے زیادہ تکلیف دِہ مسائل میں سے ایک ہے۔ یہ بجلی کی قلت اور ڈسٹری بیوشن کے غیر فعال نظام کا نتیجہ ہے۔ اس قسم کی قلت گھریلو اور کاروباری دونوں قسم کے صارفین کو متاثر کرتی ہے۔ اس نئے نظام کی وجہ سے صارفین کو لوڈ شیڈنگ کے اوقات کا پہلے سے علم ہو گا، اور یوں وہ اپنے کام اور گھریلو معمولات میں بجلی کے استعمال کی بہتر طور پر منصوبہ سازی کرنے کے قابل ہوں گے۔”نیٹ ورک آپریشنز سنٹر“ کا افتتاح توانائی کے شعبہ میں امریکہ اور پاکستان کے درمیان وسیع تر شراکت داری کا ایک اور نمایاں سنگ میل ہے۔ امریکی حکومت کی جانب سے توانائی کے شعبے میں معاونت کے پروگرام کے تحت یو ایس ایڈنے تربیلا، جامشورو، منگلا، گدو اور مظفر گڑھ کے بجلی گھروں کی تجدید کے لیے فنڈ دیے ہیں، گومل زم اور ست پارا ڈیموں کی تکمیل میں معاونت کی ہے اور پاکستان بھر میں بجلی کی ڈسٹری بیوشن بہتر بنانے میں بھی مدد دی۔ توقع ہے کہ 2014ءکے اختتام پر ان کاوشوں کی بدولت پاکستان کے قومی پاور گرڈ میں کل 1400 میگا واٹ کا اضافہ ہو گا جس سے ملک کے تقریباً ایک کروڑ ساٹھ لاکھ افراد فائدہ اٹھائیں گے۔

افتتاح

 

مزید : صفحہ آخر