قصور میں وکلاءکےساتھ پولیس گردی، پنجاب بار کونسل کی کال پر لاہور کے وکلاءکی ہڑتال

قصور میں وکلاءکےساتھ پولیس گردی، پنجاب بار کونسل کی کال پر لاہور کے وکلاءکی ...

لاہور(نامہ نگار)قصور میں وکلاءکے ساتھ پولیس گردی کے خلاف پنجاب بار کونسل کی کال پر گزشتہ روز لاہور کے وکلاءنے ہڑتال کی کرکے عدالتوں کا بائیکاٹ کیا جس کے باعث لاہور کی ماتحت عدالتوں میں ہزاروں کی تعداد میں زیر سماعت مقدمات اور دعویٰ جات التوا کا شکار ہوئے جبکہ سینکڑوں سائلین کو انتہائی پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔تفصیلات کے مطابق بدھ کے روز قصور میں پولیس نے وکلاءکے ساتھ بد تمیزی کرنے کے علاوہ انہیں تشد د کا نشانہ بنایا جس پر وکلاءسراپائے احتجاج ہوئے اور پنجاب بار کونسل نے وکلاءکوہڑتال کرنے کی کال دی جس پر عمل کرتے ہوئے لاہور بار ایسوسی ایشن نے گزشتہ روز ہڑتال کی اور وکلاءعدالتوں میں پیش نہ ہوئے تاہم فوری سماعت کی نوعیت کے مقدمات میں وکلاءنے عدالتوں کی معاونت کی عید الاضحی کی آمد کے پیش نظر وکلاءدرخواست ضمانتوں کی سماعتوں کے سوا اور کسی مقدمات کی سماعت کے لئے پیش نہ ہوئے جس کی وجہ سے ضلع کچہری،ماڈل ٹاﺅن کچہری،کینٹ کچہری،سیشن کورٹ،سول کورٹ،ایون عدل،احتساب عدالتوں انسداد منشیات کی خصوصی عدالت،انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں،انٹی کرپشن عدالتوں،ڈرگ کورٹ،اور بنکنگ کورٹس میں زیر سماعت 18ہزار سے زائد قتل،اقدام قتل،ڈکیتی،راہزنی،چوری،دھوکہ دہی،لڑائی جھگڑا اور دگر فوجداری مقدمات کے علاوہ پراپرٹی کے دیوانی دعویٰ جات،فیملی دعویٰ جات تنسیخ نکاح،بازو دعویٰ جات، واپڈا اور ایل ڈی اے کے علاوہ دیگر زیر سماعت فیملی اور سول معاملات کے دعویٰ جات التوا کا شکار ہوئے جبکہ سینکڑوں کی تعداد میں مرد و خواتین سائلین کو سخت پریشانی کا سامنا کرنا پڑا

 وکلاءکی ہڑتال

مزید : صفحہ آخر


loading...