دو نوں بازوﺅں سے محروم مصری نو جوان ٹیبل ٹینس چمپئن بن گیا

دو نوں بازوﺅں سے محروم مصری نو جوان ٹیبل ٹینس چمپئن بن گیا
دو نوں بازوﺅں سے محروم مصری نو جوان ٹیبل ٹینس چمپئن بن گیا

  

 قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک ) بلند ہمتی کیساتھ اگر حوصلے جواں ہوں تو انسان کچھ بھی کردکھانے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ایسے میں کوئی معذوری مجبوری یا پھر مشکلات اس کے راہ کی رکاوٹ نہیں بن سکتیں۔ مصرسے تعلق رکھنے والے دو نوں بازوﺅں سے محروم نو جوان نے معذوری کا روگ لگانے کے بجائے ٹیبل ٹینس پلیئر بن کر یہ ثابت کر دیا کہ وہ بھی کسی سے کم نہیں ہے ۔ابراہیم ال حسینی حماتونامی یہ نو جوان ایک حادثے کے باعث اپنے دونوں بازوﺅں سے محروم ہوگیا تھالیکن اس نے کچھ بھی ناممکن نہیںکی سیکھ اپنے ذہن سے نکلنے نہیں دی۔ابراہیم ال حسینی نے اپنے ہم عمر ساتھیوں کیساتھ قدم سے قدم ملا کر زندگی جینے کی ٹھانی اور دیکھتے ہی دیکھتے سخت محنت کے بعد اپنے پاﺅں اور منہ سے ٹیبل ٹینس کھیلنا سیکھ گیا۔ نو جوان کیلئے جیتی جاگتی روشن مثال41سالہ ابراہیم مختلف کھیل کے مقابلوں میں صحتمند کھلاڑیوں کے ساتھ اپنے منہ اور پاﺅں کے سہارے ٹیبل ٹینس کھیلتا اور اپنی مہارت کا مظاہر ہ پیش کر تا ہے جوکہ اس جیسے معذور افراد کیلئے ہمت اور زندہ دلی کی اعلیٰ مثال ہے۔

مزید : کھیل