سونگھنے کی حس سے زندگی کا دورانیہ معلوم کرنا ممکن ہوگیا

سونگھنے کی حس سے زندگی کا دورانیہ معلوم کرنا ممکن ہوگیا
سونگھنے کی حس سے زندگی کا دورانیہ معلوم کرنا ممکن ہوگیا

  


نیویارک (ویب ڈیسک) ڈاکٹر لوگوں کی عمر کے پچھلے حصے میں سونگھنے کی حس کی طاقت معلوم کرکے آئندہ پانچ سال تک زندہ رہنے کے امکانات کا اندازہ لگاسکتے ہیں۔ امریکی خبر رساں ادارے کے مطابق 3000 بالغ افراد کے سروے میں سامنے آنےوالے نتا ئج کے مطابق سونگھنے کی کمزور حس والے 39 فیصد افراد پانچ سال کے اندر اندر مرگئے جبکہ ان کے مقابلے میں جو 10 فیصد افرد بوکی صحیح پہچان کر سکے وہ زندہ رہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ سونگھنے کی حس ختم ہونے کی وجہ سے براہ راست موت واقع نہیں ہوتی لیکن یہ ابتدائی وارننگ کی نشانی ہے۔ شکاگو یونیورسٹی کے محققین نے 57 سے 85 سال کے عمر کے درمیان افراد کے نمائندہ نمونے پر سونگھنے کے ٹیسٹ کئے۔ اس ٹیسٹ میں شامل افراد کو مختلف بومعلوم کرنا تھے۔ ان میں پیپر منٹ، مچھلی، مالٹا، گلاب اور چمڑے کی بو شامل تھی۔ عمر، خوراک، سگریٹ نوشی کی عادت، غربت اور صحت کے دیگر مسائل کو خاطر میں لاتے ہوئے بھی محققین اس نتیجے پر پہنچے کہ ان لوگوں کو جن کی سونگھنے کی صلاحیت کمزور ، زیادہ خطرہ ہے۔

مزید : تعلیم و صحت


loading...