لاہور ،ضمنی انتخاب فوج کی نگرانی میں ووٹوں کی گنتی اور رزلٹ مرتب کرنے کا فیصلہ

لاہور ،ضمنی انتخاب فوج کی نگرانی میں ووٹوں کی گنتی اور رزلٹ مرتب کرنے کا ...

لاہور(نامہ نگار)این اے 122اور پی پی 147کے ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسرزکی رینجرز ہیڈ کوارٹر میں آرمی اور رینجر افسران سے میٹنگ ہوئی جس میں 11اکتوبرکوان حلقوں میں صاف اور شفا ف الیکشن کروانے سے متعلق لائحہ عمل پر غور کیاگیا۔الیکشن کمیشن نے ایک نوٹیفکیشن کے ذریعے این اے 122اورپی پی 147میں الیکشن کے دوران فوج کوتعینات کرنے اور فوج اور رینجر کومجسٹریٹ کے اختیارات دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالے سے رینجر ہیڈ کوارٹر میں آرمی افسران اورڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر احمد نوازاورریٹرننگ آفیسر زاہداقبال نے آرمی افسران سے میٹنگ کی جس میں سی سی پی اولاہورامین وینس بھی موجود تھے۔ ریٹرننگ آفیسرزاہد اقبال نیاین اے 122کے 284پولنگ سٹیشنز کے بارے میں میجر علی اصغر خان اور کیپٹن شہریار بھٹی سمیت دیگر آرمی اور رینجر افسران کوبریفنگ دی اور حساس پولنگ سٹیشن کی نشاندہی کی۔ الیکشن کمیشن کے نوٹیفکیشن کے مطابق میٹنگ میں فیصلہ کیاگیا کہ فوج اوررینجرزکے جوان پولنگ سٹیشن کے اندر اور باہر موجود رہیں گے اور کسی بھی بدنظمی اوربے ضابطگی کی شکایت سامنے آنے پر پریزائیڈنگ افسرکو فوری طور پر آگاہ کریں گے۔ اگر پریذائیڈنگ افسرمعاملے کانوٹس نہ لے توفوج کے جوان اپنے متعلقہ فوج اوررینجر کے انچارج آفیسر کو اطلاع کریں گیاور فوجی افسران اپنے خصوصی اختیارات کواستعمال کرتیہوئیفوری کارروائی کریں گے۔ فوجی افسران ہنگامہ آرائی، بد نظمی اوربے ضابطگی میں ملوث کسی بھی شخص کو جیل بھجوا سکیں گے۔میٹنگ میں فیصلہ کیا گیا کہ 10اکتوبرکی شام پولنگ اسٹیشن میں فوج کی تعیناتی شروع ہوجائے گی اور 11اکتوبر کی رات تک فوج تمام پولنگ اسٹیشن پر موجود رہے گی۔ فوجی افسران کی نگرانی میں ہی ووٹوں کی گنتی ہو گی اور رزلٹ مرتب کیا جائے گا۔

مزید : صفحہ اول