فنی تربیت فراہم کر کے بے روزگاری کا مسلہ حل کیا جا سکتا ہے ،ذوالفقار چیمہ

فنی تربیت فراہم کر کے بے روزگاری کا مسلہ حل کیا جا سکتا ہے ،ذوالفقار چیمہ

لاہور(پ ر)سارے ملک کے نوجوان اپنے دست ہنر سے روزگار کما کر عزت اور وقارکی زندگی گزارنا چاہتے ہیں مگر انہیں فنی تعلیم مہیا کرناحکومت اور صنعتکاروں کی مشترکہ ذمہ داری ہیوہ گزشتہ روز مقامی ہوٹل میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ سیمینار سے خطاب کر رہے تھے۔ جس میں بڑی تعداد میں صنعتکاروں اور سو شل ویلفےئر ڈیپارٹمنٹ کے نمائندوں نے شرکت کی ۔انہوں نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ یہ ایک قو می مشن ہے تمام فر یق اس میں قومی جذبے کے ساتھ شامل ہوں۔ ذوالفقار احمد چیمہ نے کہا کہ نیوٹیک نے فنی تعلیم و تربیت کے میدان میں بہت سی اصلاحات کی ہیں مگر سب سے بڑا چیلنج یہ ہے کہ ان ٹریڈز کی تربیت ہوتی رہی جس کی مارکیٹ میں ڈیمانڈ نہیں ہے۔ اب ہم صنعتکاروں سے انکی ضروریات پوچھ کر ان ٹریڈز میں تربیت فراہم کریں گے،تاکہ نوجوانوں کو لازمی روزگار مل جائے۔اس وقت ہر نوجوان کو ڈھائی ہزار روپے وظیفہ دیا جاتا ہے جو بڑھا دیا جائے گا۔انہوں نے کہا صنعت کے ہر سیکٹر میں باہنر لوگ تیار کیے جائیں گے تاکہ عوام کے گھروں میں خوشحالی آئے اور صنعت کی پیداوار کی استطاعت بڑھے اور معیشیت مضبوط ہو۔ اس سے ایک انقلاب آئے گا۔نیوٹیک کا سرٹیفکیٹ حقدار کو ہی ملے گا مگر یہ سرٹیفکیٹ اس کے لیے امکانات کے دروازے کھول دے گا۔ڈی جی نیو ٹیک جاوید نثار سید نے ا س مو قع پر نیوٹیک کے نئے منصو بوں کے بارے میں شر کاء کو تفصیلی بر یفنگ دی ۔ڈی آئی جی مو ٹروے پولیس مرزا فاران بیگ اور ایس ایس پی مسرور عالم بھی اس مو قع پر موجو د تھے ۔ جر منی کے ادارے جی آئی زکے نما ئندے عمر نے بھی بر یفنگ دی ۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...